ملتان کی عدالت نے قندیل بلوچ قتل کیس میں مفتی عبدالقوی کو مزید تین روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا

 ملتان کی عدالت نے قندیل بلوچ قتل کیس میں مفتی عبدالقوی کو مزید تین روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا


قندیل بلوچ قتل کیس میں شامل تفتیش مفتی عبدالقوی کو چار روزہ ریمانڈ ختم ہونے پر ملتان میں جوڈیشل مجسٹریٹ پرویز خان کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ پولیس نے عدالت سے مفتی عبدالقوی کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جس کو منظور کرتے ہوئے عدالت نے انہیں مزید تین روزہ جسمانی ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کردیا جس کے بعد انہیں تھانے میں منتقل کردیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ اس سے پہلے مفتی عبدالقوی کے دوبار چار روزہ ریمانڈ دیے جا چکے ہیں جو انہوں نے دل میں تکلیف کے باعث ہسپتال میں گزارے ہیں۔ مفتی عبدالقوی کو پولی گرافک ٹیسٹ کے لیے بدھ کے روز ملتان سے لاہور بھی لایا گیا جہاں ان کا پانچ گھنٹے سے زائد پولی گرافی ٹیسٹ کیا گیا۔ اس دوران ان سے قندیل بلوچ قتل کیس اور مقتولہ کے بھائی سے تعلقات سمیت مختلف سوالات کیے گئے۔ سوشل میڈیا پر متنازع ویڈیوزکے ذریعے شہرت حاصل کرنے والی ماڈل قندیل بلوچ کو اس کے بھائی وسیم نے گزشتہ برس غیرت کے نام پر گلا دبا کر قتل کردیا تھا۔ مفتی عبدالقوی پر قندیل کے بھائی کو قتل کے لیے اکسانے کا الزام ہے۔

Most Popular