افغانستان میں ناکامی کا الزام پاکستان پرنہیں لگایا, امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل

افغانستان میں ناکامی کا الزام پاکستان پرنہیں لگایا,  امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل

مشیرقومی سلامتی لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ ناصر جنجوعہ سے امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل نے اسلام آباد میں ملاقات کی جس میں امریکی صدر کی افغانستان و جنوبی ایشیا پالیسی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ امریکی سفیر کا کہنا تھا ڈونلڈ ٹرمپ کے بیان کو توڑمروڑ کر پیش کیا گیا۔ امریکی صدر نے افغانستان میں ناکامی کا الزام پاکستان پر نہیں لگایا۔ افغان مسئلے کا فوجی حل پالیسی کا ایک جزو ہے۔ ڈیوڈ ہیل نے کہا افغان مسئلے کے حل کیلیے پاکستان کے کردار کو خارج از امکان نہیں کیا۔ امریکاچارملکی کوآرڈینیشن گروپ کو فعال کرنے پر غور کررہا ہے جس میں پاکستان کااہم کردار ہوگا۔ امریکادہشت گردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں کوتسلیم کرتا ہے۔ امریکی سفیر نے کہا افغانستان میں موجود اضافی امریکی فوجی پاکستان کے دشمنوں کیخلاف بھی کارروائی کرینگے۔ افغانستان میں بھارت کا کردار صرف ترقیاتی کاموں کے حوالے سے ہے۔ اس موقع پرگفتگوکرتے ہوئےمشیرقومی سلامتی ناصرجنجوعہ کا کہنا تھا کہ پاکستان نئی امریکی پالیسی کا باریک بینی سے جائزہ لے رہا ہے اور تمام آپشنز پر غور جاری ہے۔ امریکی صدرکےخطاب سےحکومت اورپاکستانی عوام کےجذبات کوٹھیس پہنچی۔ پاکستان پر الزام لگانا، دھمکیاں دینا اور دنیا کے سامنےغلط انداز میں پیش کرنا ناقابل قبول ہے۔ امریکی پالیسی نے خدشات کو جنم دیا جو خطے میں عدم توازن کا باعث بنے گی, افغانستان میں جنگ جیتنے کے بجائے اس کو ختم کرنے کی کوششیں کرنی چاہئیں

Most Popular