اعتزازاحسن کا کہنا ہےکہ اپوزیشن نےاتفاق رائےسےTORsبنائےگئے۔وزیراعظم نہیں بلکہ پانامہ پیپرزمیں موجودہرنام کااحتساب ہوناچاہیے

 اعتزازاحسن کا کہنا ہےکہ اپوزیشن نےاتفاق رائےسےTORsبنائےگئے۔وزیراعظم نہیں بلکہ پانامہ پیپرزمیں موجودہرنام کااحتساب ہوناچاہیے

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ نوازشریف اپنے وزارت اعلی کے دور سے اب تک دیے گئے ٹیکس اور آمدن کے بارے میں بتائیں۔ اپوزیشن حکومتی ٹی اوآرکو مسترد کرچکی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ضیا الحق کیخلاف بننے والی ایم آرڈی بنی میں بھی مختلف جماعتوں میں کم ہم آہنگی تھی۔ تحریک انصاف کے سوال ان سے ہی کئے جائیں۔ اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نوازشریف ہی نہیں بلکہ پانامہ پیپرزمیں موجود ہرنام کا احتساب ہونا چاہیے۔ آف شور کمپنیاں لگانے کیلئے پیسہ کس طرح بیرون ملک گیا۔ رقم کی بیرون ملک منتقلی کے وقت ٹیکس کیوں ادا نہیں کیا گیا قوم کو سب کچھ بتایا جائے۔ رہنما پیپلزپارٹ کا کہنا تھا کہ حسین نواز نے اپنی کمپنیاں دوسرے کے نام رکھیں۔ پانامہ پیپرز میں وزیراعظم نوازشریف کا نام آنے سے ملک کے بدنامی ہوئی۔

Most Popular