droneحملےانسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہیں،جوافغانستان میں امن عمل اورپاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال کوخراب کررہےہیں:عمران خان

 droneحملےانسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہیں،جوافغانستان میں امن عمل اورپاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال کوخراب کررہےہیں:عمران خان

روسی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے چئیرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کو ٹارگٹ کرنے کیلئے کئے جانے والے غیرانسانی ڈرون حملے افغانستان میں امن عمل کو نقصان پہنچا رہے ہیں،،، ان کا کہنا تھا کہ ڈرون حملوں کی وجہ سے ہی پاکستان میں سیکیورٹی کی حالت کمزور ہے، انہی حملوں نے بنیاد پرستی کو جنم دیا،عمران خان کا کہنا تھا کہ ڈرونز کا استعمال ایسا ہی ہے جیسے ایک کمپیوٹر گیم میں انسانوں کو قتل کیا جارہا ہو یا ایسا رویہ اپنایا گیا ہو جیسے یہ لوگ کسی دوسرے سیارے سے ہیں۔۔ کیا ان لوگوں کو اتنا بھی حق نہیں کہ وہ یہ بتا سکیں کہ وہ معصوم لوگ ہیں۔ سمجھ سے بالا تر ہے کہ امریکا یہ سب کیسے کرسکتا ہے،عمران خان کا کہنا تھا کہ سوچیں جب جاسوس طیارے سے نکلنے والا میزائل پھٹتا ہے اس کی زد میں آنے والے خاتون بچے اور معمر افراد دہشت گرد نہیں ہوتے۔۔۔ ڈرون حملوں میں بہت سے ایسے لوگ جاں بحق ہو گئے جن کا دور دور تک دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں تھا۔ اگر ڈرون حملے کارآمد ہوتے تو اب دہشت گردی ختم ہو جانی چاہیے تھی،انہوں نے ڈرون حملوں کو ماورائے عدالت قتل قرار دیتے ہوئے کہا کہ ڈرون حملے عام انسان کو دہشتگرد بنا رہے ہیں، ایک انسانی بم جو کہیں بھی پھٹ جاتا ہے۔ کپتان نے حکومت کو بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا کہا کہ موجودہ حکمرانوں کے اقدامات شرمناک ہیں،، انہیں صرف اور صرف امریکی امداد کی پرواہ اور ڈالرز سے مطلب ہیں، وہ نہیں جانتے کہ لوگوں کے ساتھ کیا ہو رہا ہے۔

Most Popular