پیپلزپارٹی اپنے قیام کے 50 سال مکمل ہونے پر گولڈن جوبلی سالگرہ آج منائےگی۔

پیپلزپارٹی اپنے قیام کے 50 سال مکمل ہونے پر گولڈن جوبلی سالگرہ آج منائےگی۔

روٹی، کپڑا اور مکان کے نعرے کے ساتھ انیس سو سڑسٹھ میں معرض وجود میں آنے والی پاکستان پیپلزپارٹی پچاس برس کی ہوگئی ہے، پیپلز پارٹی کے بانی چیئرمین ذوالفقار علی بھٹو کے اس مقبول نعرے کو بھرپور پذیرائی ملی،، انیس سو ستر کے انتخابات میں پیپلز پارٹی نے بھرپور کامیابی حاصل کی، ذوالفقار علی بھٹو نے اقتدار سنبھالا،،اور قوم کو انیس سو تہتر کا متفقہ آئین دیا، انیس سو ستتر میں ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی کے بعد پیپلز پارٹی کمزور پڑ گئی،تاہم بے نظیربھٹو نے پارٹی کو ایک بار پھر عروج پر پہنچا دیا، وہ دو بار ملک کی وزیراعظم بنیں،ستائیس دسمبر دو ہزار سات کو راولپنڈی میں بے نظیر کی شہادت کے بعد ملک میں لاقانونیت کی صورت حال پیدا ہوگئی اور ہرطرف جلاؤ گھیراؤ کی صورتحال بن گئی،تاہم اس موقع پر پارٹی سنبھالنے والے آصف زرداری نے "پاکستان کھپے" کا نعرہ لگایا اور کارکنوں کے جذبات کو کنٹرول کیا۔
دو ہزار آٹھ کے انتخابات میں ہمدردی کے ووٹ سمیٹ کر پیپلزپارٹی ایک بار پھر اقتدار میں آئی، اپنے دور حکومت میں آئے روز نت نئے سکینڈل سے بحران میں ہی گھری رہی اور مقبولیت برقرار نہ رکھ سکی،تاہم مفاہمت کے بادشاہ آصف زرداری کی پالیسیوں کے باعث پانچ سال پورے کرنے میں کامیاب رہی، پیپلزپارٹی نے مدت تو پوری کی تاہم کرپشن الزامات نے اس کی ساکھ کو شدید نقصان پہنچایا۔۔اور دوہزار تیرہ کے انتخابات میں سکڑ کر سندھ تک محدود ہو گئی، آج بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں پیپلز پارٹی اپنی ساکھ کی بحالی کے لیے سرگرداں ہے اور آس لگائے بیٹھی ہے کہ آئندہ انتخابی نتائج دو ہزار تیرہ سے زیادہ نہیں تو اس قدر بہتر ضرور ہوں کہ پنجاب سے کچھ سیٹیں لے سکے

Most Popular