شہباز شریف نے خود کمیشن بنایا،قاتلوں کی نشاہدہی کی وجہ سے رپورٹ کو دبا دیا گیا۔

شہباز شریف نے خود کمیشن بنایا،قاتلوں کی نشاہدہی کی وجہ سے رپورٹ کو دبا دیا گیا۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے طاہر القادری کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن میں چودہ کارکنان شہید کیے گئے جبکہ نوے کو گولیاں ماری گئیں،وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے کہا تھا ذمےداری ان پر آئی تو فوری استعفیٰ دیں گے،رپورٹ میں حکومت پنجاب کو قتل عام کا ذمہ دار قرار دیا گیا، قاتلوں کی نشاہدہی کی وجہ سے رپورٹ کو دبا دیا گیا، اصولی موقف پر قائم تھے کہ شہباز شریف استعفیٰ دیں، طاہر القادری نے کہا کہ اسلام آباد میں 75 روز تک دھرنا جاری رہا جس میں شریف برادران کے استعفے کا مطالبہ نہیں مانا گیا تو قانونی جنگ لڑنے کا فیصلہ کیا،سترہ جون کےواقعے کا مقدمہ اس وقت کے آرمی چیف کی مداخلت پر درج ہوا،اعلیٰ عدلیہ کےججز نے قانون و انصاف کا سربلند کردیالیکن ابھی انصاف نہیں ملا،شہدا کے اہلخانہ کے ساتھ رپورٹ لینے جائیں گے اور دھرنا دیں گےتاہم حکومت نےرپورٹ شائع کر دی تو واپس آجائیں گے۔
طاہر القادری نے کہا کہ مقدمے کے ضمن میں ہماری حکمت عملی طے شدہ تھی کہ اس معاملےکو طول دیا جائے تا کہ ان کے دور حکومت میں فیصلہ نہ آئے، عدالتیں جو درخواستیں مسترد کرتی تھیں اس کیخلاف اپیل کرتے تھے،اس موقع پر سربراہ عوامی تحریک نے پارٹی منتظمین کو ہدایت کی کہ ان کا کنٹینر بھی تیار کر کے بجھوادیا جائے۔

Most Popular