وزیراعلٰی پنجاب نے خان گڑھ واقعے میں خواتین کوبرہنہ کرکے بازارمیں گھمانے والے افراد کوآج شام تک گرفتارکرنے کا حکم دے دیا

وزیراعلٰی پنجاب نے خان گڑھ واقعے میں خواتین کوبرہنہ کرکے بازارمیں گھمانے والے افراد کوآج شام تک گرفتارکرنے کا حکم دے دیا

میاں شہبازشریف صبح سویرے خان گڑھ میں متاثرہ خواتین کے گھرپہنچ گئے جنہیں کل شام نیم برہنہ حالت میں رشتہ مانگنے کی پاداش میں بازارمیں گھمایا گیا۔ وزیراعلٰی نے ڈی سی او کو حکم دیا ہے کہ اگر آج شام تک باقی ملزم گرفتارنہ ہوئے توانہیں معطل کردیا جائے گا۔ واقعے کے دو ملزمان موقع پرگرفتارکرلیے گئے تھے جبکہ باقی تین ملزم ابھی تک مفرورہیں۔ وزیراعلٰی جب متاثرہ خواتین کے گھرپہنچے توخواتین میاں شہبازشریف کے پاؤں پڑگئیں۔ وزیراعلٰی نے متاثرہ خواتین کے لیے پانچ لاکھ روپے امداد کا اعلان کیا۔ بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شہبازشریف نے کہا کہ حوا کی بیٹی کی اس طرح بے توقیری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ یہ ایک انسانیت سوز واقعہ ہے۔ انہوں نے ڈی پی او سے کہا کہ وہ قانون کا جائزہ لیں اگر یہ جرم دہشت گردی ایکٹ میں آتا ہے تو اس کا مقدمہ دہشت گردی ایکٹ کے تحت درج کیا جائے۔ پولیس کو ہدایت کی گئی ہے کہ اڑتالیس گھنٹوں کے اندر چالان ہر صورت عدالت میں جمع کرایا جائے۔ وزیراعلٰی نے واقعے کی ویڈیو بھی ریکور کرنے کی ہدایت کی ہے۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular