کراچی کی احتساب عدالت نے سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم کو بائیس فروری تک جوڈیشل رییمانڈ پرجیل بھیج دیا

کراچی کی احتساب عدالت نے سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم کو بائیس  فروری تک جوڈیشل رییمانڈ پرجیل بھیج دیا

کراچی کی احتساب عدالت میں ڈاکٹر عاصم کو سخت سیکیورٹی میں پیش کیا گیا۔ عدالت میں نیب کی جانب سے تفتیشی افسر ضمیر عباسی نے ریمانڈ رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ڈاکٹر عاصم نے اپنے دور میں اختیارات کا ناجائز استعال کیا۔ ڈاکٹر عاصم منی لانڈرنگ کیس میں بھی ملوث ہیں۔ انہوں نے پاکستانی نژاد برطانوی شہری سجاد بشیر کے ذریعے رقم بیرون ملک بھیجی۔انکا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عاصم اپنے اثاثہ جات کے بارے میں نیب کو مطمئن نہیں کرسکے۔ ڈاکٹر عاصم اور دو سابق پیٹرولیم سیکریٹریز نے نیشنل لوڈ مینجمنٹ میں اختیارات کا ناجائز استعمال کیا۔نیب کے تفتیشی افسر نے عدالت سے استدعا کی کہ ڈاکٹر عاصم سے مزید تفتیش کرنی ہے اس لئے ان کا مزید سولہ روز کا ریمانڈ دیا جائے۔ سماعت میں ڈاکٹر عاصم کے وکیلوں کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عاصم کو مزید ریمانڈ پر نہ دیا جائے۔ عدالت نے وکلا کا موقف سننے کے بعد ڈاکٹر عاصم کو بائیس فروری تک جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے نیب کو ہدایت کی کہ آئندہ سماعت پر ریفرنس دائر کرے۔

Most Popular