زینب جیسے واقعے کی پاکستان میں سزا صرف سزائے موت ہے۔عمران خان

 زینب جیسے واقعے کی پاکستان میں سزا صرف سزائے موت ہے۔عمران خان

اسلام آباد میں اپنی رہائشگاہ پر نیوز کانفرنس کے دوران چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا تھا کہ پوری قوم قصورمیں زینب سے پیش آنیوالے واقعے پر صدمے میں ہے اور حکومت کہتی ہے والدین اپنے بچوں کی خود حفاظت کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ زینب جیسے واقعے کی پاکستان میں سزا صرف سزائے موت ہے,عمران خان کا کہنا تھا کہ ایک پاکستانی ہونے کے ناطے چیف جسٹس پاکستان سے مطالبہ کرتا ہوں کہ ماڈل ٹاؤن واقعے کانوٹس لیں۔ ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی جاتی عمرارہائشگاہ میں اڑھائی ہزار پولیس اہلکارتعینات ہیں جن پر سات ارب روپے خرچ ہو رہے ہیں۔چیف جسٹس اس بات کا بھی نوٹس لیں, چیئرمین تحریک انصاف نے ڈاکٹر طاہرالقادری کی احتجاجی تحریک میں شامل ہونے کا اعلان بھی کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ طاہرالقادری سترہ جنوری کو احتجاج کے لیے نکلیں گے اور میں اٹھارہ جنوری کو اپنے ٹائیگرز کے ساتھ انہیں جوائن کروں گا, عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ زینب جیسے واقعات کےسدباب کیلیے پنجاب میں پولیس کو خیبرپختونخوا پولیس کی طرح پروفیشنل بنانا ہوگا۔ ان کا کہنا تھا تمام مسائل کاحل فوری الیکشن ہیں

Most Popular