جنہوں نے سترسال ملک سے کھیل کھیلا ان کا بھی احتساب ہونا چاہیے:سابق وزیراعظم نوازشریف

جنہوں نے سترسال ملک سے کھیل کھیلا ان کا بھی احتساب ہونا چاہیے:سابق وزیراعظم نوازشریف

سابق وزیراعظم نوازشریف نے لاہور میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد سے چار روز میں لاہور پہنچا ہوں۔ ہرکارکن پوچھتا ہے وہ کون سے لوگ ہیں جنہوں نے نوازشریف کو نااہل کیا۔ لاہورجلسے میں لوگوں کا جذبہ انقلاب کا پیش خیمہ ہے۔ انقلاب نہ آیا توہماری قوم بدترین قوم بن جائے گی۔ نوازشریف نے کہا سترسال میں آنے والے تمام وزرائے اعظم کو کیوں مدت پوری نہیں کرنے دی گئی۔ جن لوگوں نے پاکستان کے ساتھ کھیلا، تماشا کیا، کیا ان کا احتساب ہونا چاہیے یا نہیں۔ نوازشریف نے کہا انیس سو اکہتر میں بھی پاکستان دولخت ہوا، اللہ نہ کرے پاکستان کو پھر کوئی حادثہ پیش آجائے۔ جب تک ملک کی تقدیر نہیں بدل جاتی گھر نہیں بیٹھوں گا۔ ملک کی تقدیربدلنے کیلیے سسٹم کوبدلنا ہوگا۔ اس سسٹم میں وائرس ہے،ہمیں آئین اورنظام بدلنا ہوگا۔ انصاف کا نیا نظام لائیں گے جس میں نوے دنوں کے اندر انصاف ملے گا۔ سابق وزیراعظم نے کہا پاکستان کی مالک بیس کروڑ عوام ہے۔ جب تک بنیادی نظام ٹھیک نہیں ہوگا دنیا میں پاکستان کا تماشا بنا رہے گا۔ ملک میں انقلاب برپا کرنے کیلیے عوام کو میرا ساتھ دینا ہو گا۔ انہوں نے کہا وہ جلد ہی کارکنوں کو اپنے انقلابی سیاسی لائحہ عمل سے آگاہ کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نظام بدلنے تک وہ گھر نہیں بیٹھیں گے۔ لاہور جلسے میں سابق وزیراعظم نوازشریف کے علاوہ وزیراعلی پنجاب، وزیراعلی بلوچستان، وفاقی وزیر خواجہ سعدرفیق اور دیگر لیگی رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔

Most Popular