نیب ریفرنسز میں نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر پر آج فرد جرم لگے گی

نیب ریفرنسز میں نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر پر آج فرد جرم لگے گی

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمدبشیر آج شریف خاندان کیخلاف لندن فلیٹس، العزیزیہ سٹیل ملز اور فلیگ شپ کمپنیوں کے کیسز کی سماعت کریں گے۔ عدالت نے سابق وزیراعظم نوازشریف کی گزشتہ سماعت پر ایک دن کیلیے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کی تھی تاہم نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر پر فردجرم عائد کرنے کیلیے تیرہ اکتوبر کی تاریخ مقرر کر رکھی ہے۔ نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے اسلام آباد جانے سے پہلے لاہور میں وکلا کے پینل سے ملاقات کی اور عدالت میں کیسز سے متعلق صلاح مشورہ کیا۔ نوازشریف اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی تیمارداری کی وجہ سے پیش نہیں ہوں گے جبکہ ان کے بیٹوں حسن اور حسین نواز کی پیشی کا بھی کوئی امکان نہیں ہے۔ عدالت نے حسن اور حسین کی طلبی کے اشتہارعدالت کے باہر چسپاں کیے جن میں کہا گیا ہے کہ حسن اور حسین نواز ایک ماہ کے اندر عدالت میں پیش نہ ہوئے تو اشتہاری قرار دیکر انکے دائمی وارنٹ جاری کر دیے جائیں گے۔دوسری جانب سابق وزیراعظم نوازشریف کے صاحبزادوں کا اپنے اوپر قائم مقدمات پر موقف ہے کہ وہ پاکستانی شہری نہیں ہیں اس لیے ان پر پاکستانی قوانین کا اطلاق نہیں ہوتا۔ واضح رہے کہ نوازشریف، حسن اور حسین نواز لندن فلیٹس،عزیزیہ سٹیل ملز اور آف شور کمپنیوں کے ریفرنسز میں جبکہ مریم نواز اور انکے شوہر کیپٹن صفدر صرف لندن فلیٹس کے معاملے میں نامزد ملزم ہیں۔

Most Popular