وزیراعظم کا موقف عدالت اور ایوان میں مختلف ہے وہ اسمبلی میں آکر وضاحت کریں کونسا بیان سچ ہے, شاہ محمود قریشی

 وزیراعظم کا موقف عدالت اور ایوان میں مختلف ہے وہ اسمبلی میں آکر وضاحت کریں کونسا بیان سچ ہے, شاہ محمود قریشی

قومی اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا اجلاس میں ایوان کا استحقاق مجروح ہوا ہے, اسپیکر کو چاہیئےتھا خورشید شاہ کے بعد پی ٹی آئی کو بولنے کا موقع دیتے, تحریک انصاف کو بولنے کا موقع نہ دینا حکومتی پلان کا حصہ تھا, ایاز صادق کو چاہیئے تھا کہ وہ تحریک انصاف کا موقف سنتے تو پھر چاہتے تو رولنگ دے دیتے, انہوں نے کہا پی ٹی آئی اسپیکر کی رولنگ کو مسترد کرتی ہے, ایاز صادق نے آج خود کو ایک بار پھر مسلم لیگ ن کا وفادار ثابت کیا ہے, اور نادان دوستوں کی وجہ سے حکومت ایک بار پھر شرمندہ ہوئی ہے, شاہ محمود قریشی نے کہا نواز شریف نے قومی اسمبلی میں کچھ اور کہا جبکہ عدالت میں ان کے وکیل نے کہا ایوان میں دیا گیا بیان سیاسی تھا, نواز شریف نے نواز شریف نے بیچ بھنور اپنا موقف تبدیل کر لیا, اور اب قطری شہزادے کا خط پیش کر دیا, اور کہا چالیس سال پرانی بات کا ثبوت کہاں سے لا کر دیں, انہوں نے کہا وزیراعظم نے ایوان اور عدالت میں دو مختلف بیان دیئے ۔وہ قومی اسمبلی میں آئیں اور وضاحت کریں کہ ان کا کونسا بیان سچ ہے, شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا ملک کے چپے چپے میں پاناما لیکس کا شور ہے, عوام نواز شریف سے پاناما اسکینڈل پر جواب مانگ رہی ہے

Most Popular