سپریم کورٹ میں مخدوم جاوید ہاشمی اور رحمن ملک کے خلاف توہین عدالت کی الگ الگ درخواستیں دائر

سپریم کورٹ میں مخدوم جاوید ہاشمی اور  رحمن ملک کے خلاف توہین عدالت کی الگ الگ درخواستیں دائر

سپریم کورٹ میں سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی اور پیپلز پارٹی کے رہنماء رحمن ملک کے خلاف توہین عدالت کی الگ الگ درخواستیں دائر کر دی گئیں جمعہ کو عادی درخواست گزار سید محمود اختر نقوی کی جانب سے مخدوم جاوید ہاشمی کے خلاف دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ جاوید ہاشمی یہ کہہ کر کہ کوئی جج، جنرل اور سیاستدان صادق اور امین نہیں توہین عدالت کی ہے ۔اس لیے جاوید ہاشمی پر الیکشن میں حصہ لینے پر تاحیات پابندی لگائی جائے۔ عدالت سے درخواست کی گئی ہے کہ جاوید ہاشمی کو پریس کانفرنس میں آئین کے آرٹیکل 63 کی تذلیل وتضحیک کرنے پر آرٹیکل 204 کے تحت سزا سنائی جائے۔ سینیٹر رحمن ملک کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست میں کہا گیا ہے کہ رحمن ملک نے سپریم کورٹ کی تشکیل کردہ جے آئی ٹی کے خلاف باتیں کی ہیں جس پر ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ نے رحمن ملک کے بارے ایک فیصلہ میں کہا ہے کہ وہ صادق اور امین نہیں اس طرح وہ سینٹ کے انتخابات میں حصہ بھی نہیں لے سکتے ہیں لیکن انہوں نے الیکشن کمیشن سے سازباز کر کے انتخابات میں حصہ لیا جو بذات خود ایک توہین عدالت ہے اس لیے عدالت انہیں آئین کے آرٹیکل 62،63 کے تحت نا اہل قرار دیا جائے۔

Most Popular