الیکشن ٹریبیونل بلدیاتی انتخابات کے زیر التوا کیس نمٹانے میں مکمل ناکام ہوگیا

الیکشن ٹریبیونل بلدیاتی انتخابات کے زیر التوا کیس نمٹانے میں مکمل ناکام ہوگیا

قانون کے مطابق الیکشن ٹریبیونلز کوچار ماہ کے اندر کیس کا فیصلہ کرنا ہوتا ہے،تاہم الیکشن ٹریبیونلز اس قانون پر عمل درآمد کرنے میں نکام دکھائی دیتے ہیں  بلدیاتی انتخابات کا انعقاد ہوئے دو سال گزر گئے مگر ٹریبونلز کے پاس اب بھی 1500 سے زائد کیس زیر التوا ہیں ،ذرائع کے مطابق اس وقت پنجاب میں 738 جبکہ سندھ میں 193 کیسز الیکشن ٹریبونلز کے پاس زیر التوا ہیں۔ اسی طرح خیبر پختونخواہ میں 588 جبکہ بلوچستان میں 21 کیسز التوا کا شکار ہیں۔دوسری جانب دو ہزار تیرہ کے عام انتخابات کے بھی کچھ کیسز کا ابھی تک فیصلہ نہیں ہوسکا ۔ الیکشن ٹریبیونلز کی جانب سے کیس نمٹانے میں سست روی کی وجہ سے ان کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگ گیاہے ،

Most Popular