کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

این اے ایک سو بیس کے ضمنی الیکشن کے معرکے میں کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کا مسئلہ تاحال حل نہ ہو سکا ، پہلے لاہور ہائیکورٹ میں کاغذات نامزدگی کی منظوری کو چیلنج کیا گیا ، تاہم عدالت عالیہ کی جانب سے کلثوم نواز کو کلین چٹ دیدی گئی ،، اب لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ، پیپلز پارٹی کے حلقہ این اے ایک سو بیس کے امیدوار فیصل میر نے عدالت عظمیٰ کا دروازہ کھٹکھٹایا ، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ کلثوم نواز اپنے درست مالی گوشوارے فراہم کرنے میں ناکام رہیں، لیگی امیدوار بالواسطہ یا بلاواسطہ اپنے زیراستعمال اثاثے بتانے میں ناکام رہیں، کلثوم نواز نے جان بوجھ کر اور بدنیتی سے اپنے اثاثے چھپائے، درخواست میں کہا گیا کہ کلثوم نواز آرٹیکل 62،63 کے تحت الیکشن میں حصہ لینے کی اہل نہیں، انہوں نے کرپشن جاری رکھنے کیلئے ہرحال میں الیکشن جیتنے کی قسم کھا رکھی ہے، لیگی امیدوار نے اپنا اقامہ بھی ظاہرہ نہیں کیا، عدالت سے استدعا کی گئی کہ لاہورہائیکورٹ کا 13 ستمبر کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے،درخواست میں الیکشن کمیشن، ریٹرننگ افسر، کلثوم نواز، نیب اور دیگر حکام کو فریق بنایا گیا ہے

Most Popular