ہمیں سپریم کورٹ سے امید تھی کہ میرٹ پر فیصلہ آئے گا۔ رہنماؤں مسلم لیگ ن

ہمیں سپریم کورٹ سے امید تھی کہ میرٹ پر فیصلہ آئے گا۔ رہنماؤں مسلم لیگ ن

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ کی رہنما انوشہ رحمان کا کہنا تھا کہ ہمیں سپریم کورٹ سے امید تھی کہ میرٹ پر فیصلہ آئے گا،، بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر نواز شریف کی نا اہلی کا فیصلہ واپس لینا چاہیے ، جنھوں نے ہمارے خلاف فیصلہ دیا وہی مانیٹرنگ کر رہے ہیں، سپریم کورٹ نے ہماری نظر ثانی کی اپیلیں مسترد کر دیں، سپریم کورٹ کے حکم پر نیب ریفرنس دائر کر رہا ہے، احتساب عدالت میں جو کچھ ہو گا سامنے لاتے رہیں گے، بیرسٹرظفراللہ نے کہا کہ نواز شریف عدلیہ اور جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے، اسی جے آئی ٹی نے پرویز مشرف کو کبھی نہیں بلایا،، پاکستان کے آئین اور قانون پر یقین رکھتے ہیں، آئین کے مطابق انصاف کرنا عدلیہ کا کام ہے، وہ وقت بھی آئے گا جب عدالتیں انصاف فراہم کریں گی،لیگی رہنماوں نے مزید کہا کہ انصاف ملنا نواز شریف کا حق ہے،، ہماری نظر میں فیصلہ انصاف کے تقاضوں کے خلاف ہے، ایسا کوئی کیس نہیں جس میں سپریم کورٹ نے مانیٹرنگ جج لگایا ہو 

Most Popular