نواز شریف کی جگہ ہوتا تو بطور وزیراعظم جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہوتا، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ

نواز شریف کی جگہ ہوتا تو بطور وزیراعظم جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہوتا، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ

سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ قطری خط کس طرح اور کیسے آیا اس پر جے آئی ٹی میں سوال ہوئے ہوں گے, نوازشریف کے پاس کوئی سچائی نہیں انہوں نے جو بیان دیا وہ بھی انہیں لکھ کر دیا گیا, مجھے پتہ ہے کہ کٹھ پتلیوں کے تماشے میں کون ناچ رہا ہے اور کون نچارہا ہے۔۔ میں وزیراعظم کی جگہ ہوتا تو مستعفی ہو کر جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوتا,خورشید شاہ نے کہا کہ ن لیگ کا عدالت سے رویہ باعث شرم اور افسوسناک ہے، وفاقی وزرا نے طرح طرح کے بیانات دیئے کوئی ان کے خلاف کارروائی کرنے کو تیار نہیں اگر پیپلزپارٹی کی حکومت ہوتی تو ہم جیلوں میں پڑے ہوتے ۔۔انہوں نے کہا کہ نوازشریف صادق و امین تو پہلے دن سے ہی نہیں رہے اگر وہ سچے ہیں تو آج ہی اسمبلیاں تحلیل کردیں اور کل ہی عوامی عدالت میں چلے جائیں,اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے جمہوریت کے لیے اپنے وزرائے اعظم کی قربانیاں دی ہیں, ہم طاقت کا سرچشمہ عوام کو سمجھتے ہیں اور یہی پیپلزپارٹی کا ایمان ہے ،

Most Popular