بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور غیر اعلانیہ بندش کےخلاف پیپلز پارٹی کا22 اپریل سےاحتجاجی دھرنے اور تحریک کااعلان

بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور غیر اعلانیہ بندش کےخلاف پیپلز پارٹی کا22 اپریل سےاحتجاجی دھرنے اور تحریک کااعلان

پاکستان اور آزاد کشمیر میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور غیر اعلانیہ بندش کے خلاف پیپلز پارٹی کا22 اپریل کو مظفرآباد سے احتجاجی دھرنے اور تحریک کااعلان۔ دھرنے کا اعلان صدر پیپلزپارٹی آزادکشمیر چوہدری لطیف اکبر نے گزشتہ روز سنٹرل پریس کلب مظفرآباد میں سابق وزراء اور پارٹی راہنماؤں سابق وزراء میاں عبدالوحید 'سید بازل نقوی'شوکت جاوید میر'مبارک حیدر'ناصر چک 'شگفتہ نورین و دیگر کے ہمراہ پریس کانفرس سے خطاب کے دوران کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملک سے لوڈ شیڈنگ ختم کرنے اور بجلی کے بحران پر قابو پانے کے دعوے غلط ثابت ہوئے۔انھوں نے کہاکہ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے 6ماہ میں لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے دعوے کیے اور پیپلز پارٹی کی حکومت کو ختم کرنے کیلئے لوڈشیڈنگ کو ایشو کے طور پر استعمال کیا اور مینار پاکستان پر احتجاجی کیمپ لگا کر احتجاج کیا ۔چوہدری لطیف اکبر نے کہاکہ پیپلزپارٹی بھی حکمرانوں کے خلاف ہاتھوں میں پنکھے لہرا کر ملک گیرا احتجاج کرے گی۔ان کا کہنا تھا22تاریخ کو پارٹی قیادت کے فیصلے کے مطابق پہلے مرحلے میں آزاد کشمیر کے دارالحکومت مظفرآباد میں احتجاجی دھرنا دیا جائے گااور اس کے بعد احتجاج کا سلسلہ آزادکشمیر اور پاکستان بھر میں پھلایا جائے گا۔چوہدری لطیف اکبر نے کہااگر رینٹل پاور پراجیکٹ ختم نہ کیے جاتے تو آج ملک میں بجلی کا بحران نہ ہوتا سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری نے رینٹل پاورز کو بند کروایا۔لطیف اکبر نے مردان میں عبدالولی خان یونیورسٹی کے طالب علم مشال خان کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مذہب کے نام پر قتل غارت گری کا بازار گرم ہے ۔قاتلوں نے قومی ادارے کے ملازمین کو ساتھ ملا کر ایک بے گناہ نوجوان کو قتل کیا ۔ایک سوال کے جواب میں چوہدری لطیف اکبر نے آزادکشمیر حکومت کو خبردار کیا کہ سرکاری ملازمین کے انتقامی تبادلے بند کیے جائیں بصورت دیگر پیپلزپارٹی ہر اس سرکاری دفتر کے باہر دھرنا دے گی جس سے انتقامی تبادلے جاری کیے جائیں گے۔

Most Popular