شیخ مجیب الرحمان نےوعدہ کیا تھا کہ ماضی کی طرف نہیں دیکھیں گے، عبدالقادر ملا کی پھانسی کے خلاف پارلیمنٹ کی قرارداد اپنی جگہ، پاکستان کا مؤقف متوازن ہے۔ سرتاج عزیز

 شیخ مجیب الرحمان نےوعدہ کیا تھا کہ ماضی کی طرف نہیں دیکھیں گے، عبدالقادر ملا کی پھانسی کے خلاف پارلیمنٹ کی قرارداد اپنی جگہ، پاکستان کا مؤقف متوازن ہے۔ سرتاج عزیز

قومی سلامتی اور خارجہ امورکے مشیرسرتاج عزیز نےسینیٹ اجلاس میں خارجہ پالیسی پر بحث سمیٹتے ہوئے کہا ہے کہ عبدالقادر ملا کی پھانسی اگر چہ بنگلہ دیش کا اندرونی معاملہ ہے، تاہم انسانی حقوق کی تنظیموں کےمطابق اس میں قانونی پہلوؤں کو نظرانداز کیا گیا۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ امریکا کیلئے پاکستانی سفیر کااعلان ستمبر میں کردیا تھا، وہ اگلے ہفتے اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے، افغانستان میں مفاہمت کیلئے کردار ادا کررہے ہیں، افغانستان میں ہمارا کوئی پسندیدہ نہیں ہے، نیٹو افواج کی واپسی کے بعدپیدا ہونےوالا خلا پاکستان پر نہیں کرےگا، مشیر خارجہ نے ایوان بالا کو بتایا کہ امریکا سمیت تمام ممالک میں ہماری مفاہمتی پالیسی کو پسند کیا ہے، بھارت میں انتخابات کی وجہ سےپاکستان مخالف جذبات ابھر رہےہیں، سیاچن، سرکریک اور کشمیر کے معاملات پربات چیت ہورہی ہے، پاک امریکہ تعلقات پر بات چیت کرتےہوئے مشیر خارجہ نے کہا کہ دوہزار چودہ کےآغاذ میں پاک امریکا جامعہ مذاکرات کا دوبارہ آغاذ ہوگا، ہماری غیرجانبدار پالیسی اہمیت کی حامل ہے، میزائل حملوں کےحوالےسےاقوام متحدہ میں قرارداد منظور ہوچکی ہے،اس قرارداد سےہمارےمؤقف کو تقویت ملے گی، اس سے پہلےسینیٹر رضاربانی نے کہا کہ حکومت عبدالقادر ملا کی پھانسی کےمعاملے پراپنامؤقف واضع کرے، وزارت خارجہ اور چوہدری نثار کے مؤقف میں واضع فرق ہے، اپوزیشن لیڈر اعتزاز احسن نے کہا کہ پاکستان کو غزہ کی پٹی میں تبدیل کیا جارہا ہے، حکومت طالبان کے ساتھ مذاکرات میں گومگوں کا شکار ہے۔ اے این پی کے سینیٹر زاہد خان نے کہا کہ موجودہ حکومت کی کوئی خارجہ پالیسی نہیں ہے۔ خارجہ پالیسی کو لاوارث کردیا گیا ہے، وزیرداخلہ کی پالیسی کی وجہ سےبنگلہ دیش میں پاکستانی ہائی کمشنر کو طلب کیا گیا، اجلاس میں رضا ربانی کی ملکی سیاسی و سلامتی کی صورتحال پر قرارداد بحث کے لیے منظور کرلی گئی۔

About the author /

Waqt News

Waqt News Web Team

Most Popular