دھمکی آمیز تقریر کرنے والے نہال ہاشمی نے شوکاز نوٹس پر جواب جمع کرا دیا

دھمکی آمیز تقریر کرنے والے نہال ہاشمی نے شوکاز نوٹس پر جواب جمع کرا دیا

دھمکی آمیز تقریر پر ازخودنوٹس کیس میں سینیٹر نہال ہاشمی نے شوکاز نوٹس پر جواب جمع کرا دیا ، جواب میں کہا گیا کہ تقریر کو سیاق و سباق سے ہٹ کر نشرکیا گیا، کوئی توہین عدالت نہیں کی، فراہم ریکارڈ کے مطابق فوجداری قانون کا اطلاق نہیں ہوتا، اٹارنی جنرل کو پراسیکوٹر تعینات کرنا بھی حیران کن ہے، اٹارنی جنرل نے مقدمہ درج کرنے کیلئے سندھ حکومت کو خط لکھا،تقریر 28 مئی کو مسلم لیگ ہاوس میں یوم تکبیر کے موقع پر کی گئی، تقریر کا کچھ حصہ الیکٹرانک میڈیا پر چلایا گیا، مخصوص حصہ چلانے سے ان کیخلاف منفی مہم شروع ہوئی،منفی مہم پر عدالت نے ازخود نوٹس لیا، جواب میں کہا گیا کہ ان کی ساکھ کو متاثر کرنے کی کوشش کی گئی،تمام تر کارروائی غلط فہمی کی بنیاد پرکی گئی،اللہ تعالیٰ سے معافی کا طلب گار ہوں، عمران خان، اعتزاز احسن اور دیگر کے بیانات بار بار نشر کیے گئے، نہال ہاشمی نے جواب میں قانونی نکات کا حوالہ بھی دیا ،، اور سوال پوچھا کہ کیا پہلی سماعت پر ان کیساتھ عدالت کا رویہ قانون کے مطابق تھا،کیا پاناما کیس میں انہیں دھیکلنا قانون کے مطابق تھا، کیا انہیں سنے بغیر ایف آئی آر درج کرنا قانون کے مطابق ہے،کیا سیاسی مقدمات نظام انصاف پر بوجھ نہیں بن گئے، کیا اعلیٰ عدلیہ تحقیقاتی کام نہیں کرنے نہیں لگ گئی؟ کیا عدالت کو سیاسی معاملات میں دھیکلنا عدالتی وقار کے منافی نہیںِ، نہال ہاشمی نے عدالت سے شوکاز نوٹس واپس لینے کی استدعا بھی کی ،، اور کہا کہ کراچی میں درج ایف آئی آر کو ختم کیا جائے، جبکہ اصل ملزمان کے خلاف فوجداری کارروائی کی جائے،ان خلاف ہونے والی سازش کو بے نقاب کرنے کا حکم دیا جائے،

Most Popular