سندھ اسمبلی کےاجلاس میں ایک بارپھرروایتی شورشرابادیکھاگیا

سندھ اسمبلی کےاجلاس میں ایک بارپھرروایتی شورشرابادیکھاگیا

سندھ اسمبلی کے اجلاس میں وہی روایتی انداز، وہی شور شرابا، اجلاس شروع ہوا تو اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہارالحسن کی تحریک التوا صابرقائم خانی نے پیش کرنا چاہی جس کومستردکردیا گیا،،، تحریک التوا مسترد ہونےپرایم کیوایم اراکین نے شور شرابا شروع کردیا،،، متحدہ اراکین نے ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ دیں ، ایم کیو ایم کا سندھ اسمبلی سے واک آوٹ کیا تاہم سید سردار احمد ایوان میں ہی بیٹھے رہے۔ شہلا رضا اور ایم کیو ایم رکن افتخار احمد کے درمیان نوک جھونک ہوئی۔ افتخار احمد کا کہنا تھا کہ ہمیں سندھ کارخانے بل 2015 پر بولنے کی اجازت دی جائے۔ حکومت نے شورشرابے میں ترقیاتی اتھارٹی بحالی، ترمیمی بل 2016 متعارف کرادیا۔ ،اسپیکر آغا سراج درانی نے صوبائی وزیر نند کمار سے کہا کہآپ ہمیں کبھی ہولی پر نہیں بلاتے۔اجلاس میں شہلارضا کا کہنا تھا کہ خواجہ اظہارایوان میں موجودنہیں توآپ تحریک پیش نہیں کرسکتے۔ ایم کیو ایم کےرکن صابرقائم خانی نے کراچی میں بڑھتےہوئےاتائی ڈاکٹروں کےخلاف تحریک التواپیش تحریک التوا پیش کی۔ اجلاس میں کراچی ڈوویلمپنٹ اتھارٹی کی بحالی کی بل منظور کرلیا گیا جس کے بعد اجلاس منگل کی صبح دس بجے تک کیلئے ملتوی کردیا گیا۔

Most Popular