بلدیاتی انتخاب کے پہلے مرحلے میں پنجاب کے12 اور سندھ کے 8 اضلاع میں آج پولنگ ہورہی ہے

بلدیاتی انتخاب کے پہلے مرحلے میں  پنجاب کے12 اور سندھ کے 8 اضلاع میں  آج پولنگ ہورہی ہے

پنجاب کے بارہ اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کیلئے پولنگ کا عمل جاری ہے۔ مختلف شہروں میں لڑائی جھگڑے کے بعد پولنگ تعطل کا شکار ہوئی جسے دوبارہ شروع کردیا گیا۔

سانگلہ ہل کی یونین کونسل نمبر ایک میں دو گروپوں کے درمیان تصادم کے نتیجےمیں خاتون سمیت دو افراد زخمی ہوگئے۔ پاکپتن میں پولنگ اسٹیشن چھتیس میں ن لیگ اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں فائرنگ کے تبادلے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے۔ پولیس نے فائرنگ کرنیوالے دوافراد کو گرفتار کرلیا۔ فیصل آباد میں پولنگ اسٹیشن نمبر گیارہ میں خاتون پریذائیڈنگ آفیسر اور پولنگ ایجنٹوں میں تنازع کے باعث پولنگ کا عمل روک دیا گیا جو کچھ دیر بعد بحال کردیا گیا۔ فیصل آباد میں کلیم شہید پارک پولنگ اسٹیشن میں میئر اوررانا
گروپ میں تصادم کے نتیجے میں تین افراد زخمی ہوگئے۔ وہاڑی کےعلاقے پیپلزکالونی میں قائم وارڈ اکیس میں خواتین پولنگ اسٹیشن کےباہر دو گروپوں میں ہاتھاپائی کےبعد پولیس طلب کرلی گئی۔ سیاسی جماعتوں کے کارکن ایک دوسرے کیخلاف نعرے بازی کرتے رہے۔ بہاولنگر میں پولنگ اسٹیشن آٹھ پرلیڈی پولیس موجود نہ ہونے پرعملے نے پولنگ روک دی جسے لیڈی پولیس اہلکار کے پہنچنے پر بحال کرادیا گیا۔

لاہورمیں ایک ہزار ایک سو انچاس امیدوار چیئرمین اور وائس چیئرمین کے لئے میدان میں ہیں۔۔۔مسلم لیگ ن کے چار امیدوار بلامقابلہ متنخب ہو چکے ہیں

صوبائی دارالحکومت میں یونین کونسلز کی مجموعی تعداد دو سو چوہتر ہے.کل ووٹرز کی تعداد تینتالیس لاکھ چھ ہزار آٹھ سو پچاسی ہے۔مرد ووٹرز کی تعداد چوبیس لاکھ تریپن ہزار ایک سو بیاسی ہے جبکہ خواتین ووٹرز کی تعداد اٹھارہ لاکھ ترپن ہزار سات سو تین ہے۔۔لاہورمیں ایک ہزار ایک سو انچاس امیدوار چیئرمین اور وائس چیئرمین کے لئے قسمت آزمائی کر رہے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے چار امیدوار بلامقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔ یوسی ایک سو سات سے خواجہ احمد حسان ، یوسی چھبیس سے جاوید اقبال منتخب ہوئے ہیں۔یونین کونسل ترپن سے جاوید احمد اور یوسی دو سو اٹھاون سے ملک مبشر علی بلامقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔ اقلیتوں سے تعلق رکھنے والے چوبیس امیدوار چیئرمین، وائس چیئرمین کیلئے امیدوار ہیں۔سات خواتین چیئرپرسن، تین وائس چیئرپرسن جبکہ تینتیس جنرل ممبر کے لئے بھی الیکشن میں حصہ لے رہی ہیں۔لاہور کے بلدیاتی الیکشن میں جنرل کونسلر کیلئے ایک ہزار چھ سو چوالیس نشستوں پر پانچ ہزار نو سو دو امیدوار مدمقابل ہیں۔

Most Popular