قصور میں بچیوں سے زیادتی اور قتل کے واقعات کے خلاف پنجاب اسمبلی میں توجہ دلاؤ نوٹس اور تحریک التوا جمع کرادی گئی

قصور میں بچیوں سے  زیادتی اور قتل کے واقعات کے خلاف پنجاب اسمبلی میں توجہ دلاؤ نوٹس اور تحریک التوا جمع کرادی گئی

پنجاب اسمبلی میں تحریک التوا تحریک انصاف کے محمد شعیب صدیقی کی جانب سے جمع کرائی گئی ہے۔ تحریک التوا میں کہا گیا ہے کہ قصور میں جنوری دوہزار ستر ہ سے جنوری دوہزاراٹھار تک بچیوں کے اغوا، زیادتی اور قتل کے درجنوں واقعات رونما ہوئے۔ لیکن کئی ایسے واقعات بھی ہیں جن کی رپورٹ درج نہیں ہو سکی یا درج  ہی نہیں کرائی گئی۔ ماں باپ شرم اور خوف کے مارے اپنے اپنے علاقے چھوڑ کر چلے گئے ہیں۔ تحریک التوا کے متن کے مطابق بچیوں کے اغواء، زیادتی اور قتل کے  واقعات نے حکومت کی کارکردگی کا پول کھول کرر کھ دیا۔ قصور میں ہونے  والے یہ اندوہناک اور لرزہ خیز واقعات حکومت اور محکمہ داخلہ کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔ زیادتی اور قتل کے واقعات میں روز بروز اضافے سے پنجاب کے ہی نہیں پورے پاکستان کے عوام میں بےچینی اورغم و غصہ پایا جاتا ہے۔ اسمبلی میں تحریک انصاف کی سعدیہ سہیل رانا کی جانب سے توجہ دلاؤ نوٹس بھی جمع کرایا گیا ہے۔ نوٹس کے مطابق ایک سال کے دوران اغواءاور زیادتی کے بعد قتل کیے گئےبچوں کی تعداد بارہ ہو گئی لیکن پولیس ایک ملزم کو بھی گرفتار نہ کرسکی۔ بچیوں کے اغواءاور زیادتی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں نے شہریوں کو تشویش میں مبتلا کر رکھا ہے۔ معاملے میں پنجاب حکومت نے اب تک کیا اقدامات کئے ہیں، ایوان کو مکمل تفصیل سے آگاہ کیا جائے۔

Most Popular