کراچی میں ایک بار پھر پولیس پر فائرنگ

کراچی میں ایک بار پھر پولیس پر فائرنگ

کراچی میں ایک بار پھر دہشتگردوں نے گھناؤنی کارروائی کر ڈالی ،، عزیزآباد میں نامعلوم دہشتگردوں نے فائرنگ کر کے ڈی ایس پی ٹریفک لیاقت آباد محمد حنیف اور اے ایس آئی سلطان کو شہید کرڈالا،، وزیرداخلہ نے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ،، وزیراعلیٰ سندھ کہتے ہیں ملزمان کو نہیں چھوڑیں گے،
کراچی میں ایک بار پھر ٹریفک پولیس نشانے پر ۔ اس بار دہشتگردوں نے نشانہ بنایا ڈی ایس پی ٹریفک کو ،، عزیز آباد میں موٹر سائیکلوں پر سوار چار دہشتگردوں نے ٹارگٹ کیا ڈی ایس پی ٹریفک کی گاڑی کو، دونوں اطراف سے اندھا دھند فائرنگ کی گئی ،، جس کے نتیجے میں ڈی ایس پی محمد حنیف اور اے ایس آئی سلطان ، شدید زخمی ہو گئے،، دونوں کو ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ وہ دم توڑ گئے ،،
پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری علاقے میں پہنچی ،، ذرائع کے مطابق جائے وقوعہ سے نائن ایم ایم کے اٹھارہ خول ملے ،،گاڑی کی ونڈ اسکرین پر 11 فائر کئے گئے، جبکہ فائرنگ بھی دونوں اطراف سے کی گئی ،، کراچی پولیس چیف غلام قادر تھیبو نے بھی جائے وقوعہ کا دورہ کیا ،، ان کا کہنا تھا کہ ڈی ایس پی گاڑی میں جارہے تھے ،، ان کو ریکی کر کے قتل کیا گیا ،، ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے، ادھر وزیراعلیٰ سندھ نے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ،، ان کا کہنا تھا کہ حالیہ بینک ڈکیتی اور پولیس پر حملے میں ملوث ملزمان تک پہنچ چکے ہیں ،، کسی کو نہیں چھوڑیں گے،پولیس اور آئی جی کا معاملے عدالت میں ہے ، میرے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں جو فیصلہ عدالت کرے گی پھر کچھ کریں گے، نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کرنے اور اس میں سفارشات کیلئے ایپکیس کمیٹی کے اجلاس ہوتے ہیں،ادھر وزیرداخلہ سندھ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی ،، سہیل انور سیال نے آئی جی کو سیکیورٹی ہائی الرٹ کرنے کی ہدایت دیدی

کراچی میں ایک بار پھر پولیس پر فائرنگ عزیز آباد شہید ملت گرلز کالج کے قریب فائرنگ ، 2 ٹریفک اہلکار زخمی ، ریسکیو ذرائع
زخمی اہلکاروں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا دونوں اہلکاروں کی حالت انتہائی تشویشناک ، ریسکیو ذرائع

Most Popular