زینب کے قتل کرنے کے واقع میں لاہور ہائیکورٹ میں شہبازشریف، وزیر قانون رانا ثناءاللہ اور آئی جی پنجاب کیخلاف مقدمہ درج

 زینب کے قتل کرنے کے واقع  میں  لاہور ہائیکورٹ میں شہبازشریف، وزیر قانون رانا ثناءاللہ اور آئی جی پنجاب کیخلاف مقدمہ  درج

معصوم ننھی زینب کو زیادتی کے بعد قتل کرنے کے واقع میں وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف، وزیر قانون رانا ثناءاللہ اور آئی جی پنجاب کیخلاف مقدمہ درج کرنے کے لئے لاہور ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کردی گئی، درخواست جوڈیشل ایکٹوازم پینل کے سربراہ اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر کی گئی ،، درخواست گزار کہ کہنا تھا کہ صوبائی حکومت آئینی طور پر شہریوں کے بنیادی حقوق کے تحفظ میں ناکام ہوچکی ہے، صوبائی حکومت آئین کے تحت پرنسپل آف پالیسی پر عمل درآمد کی پابند ہے، حکومت پنجاب نے پرنسپل آف پالیسی کی سالانہ رپورٹ صدر مملکت اور گورنر پنجاب کو نہ بھجواء کر آئین شکنی کی ہے،عدالت آئین پر عملدرآمد کروانے کے لیے گورنر پنجاب کو موجود حکومت کو معطل کر کے ایمرجنسی لگانے کا حکم دے،درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالت شہریوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ نہ کرنے پروزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف،،وزیر قانون پنجاب راناثناءاللہ اور آئی جی پنجاب کے خلاف اندارج مقدمہ کا حکم دے ،اور عدالت بنیادی حقوق کے تحفظ کو یقینی نہ بنانے کے عمل کو دہشت گردی قرار دے جبکہ عدالت بنیادی حقوق کے تحفظ کے لیے قانون سازی کے بھی احکامات صادر کرے۔

Most Popular