قصور میں دو دن کی کشیدگی کے بعد حالات معمول پر آگئے

قصور میں دو دن کی کشیدگی کے بعد حالات معمول پر آگئے

قصورمیں معصوم زینب کے بیہمانہ قتل کے بعد شہر کی فضا تیسرے دن بھی سوگوار ہے،، حالات معمول پر تو گئے لیکن شہریوں میں غم وغصہ ابھی بھی ختم نہ ہوسکا،،، دو دن جاری رہنے والی کشیدگی کے بعد شہر میں تمام رکاوٹیں ہٹا کر راستے کھول دیئے گئے ہوٹل ، دکانیں کاروبار اور تعلیمی ادارے بھی کھل گئے،،، ٹرانسپورٹ بھی سڑکوں پر رواں دواں ہے، تاجر تنظیموں نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے امن و امان برقرار رکھنے میں مدد کی یقین دہانی کرادی۔ٹرانسپورٹ مکمل طور پر بحال ہونے سے شہریوں نے سکھ کا سانس لیا۔ شہباز روڑ، دیپال پور اور لاہور قصور روڑ پر ٹریفک بحال کر دی گئی،، شہر میں امن و امان کے بعد رینجرز نے فلیگ مارچ کیا، زینب کے بہیمانہ قتل پر قصور گزشتہ روز بھی جلاؤ گھیراؤ اور ہنگاموں کی نذر رہا،مشتعل مظاہرین نے ڈی ایچ کیو اسپتال پر دھاوا بول کر اسے خالی کرادیا۔ توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی کے دوران سرکاری املاک کو بھی بری طرح نقصان پہنچا۔

Most Popular