ہسپتالوں کی ایمرجنسی یونٹوں کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع

ہسپتالوں کی ایمرجنسی یونٹوں کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع

پاکستان تحریک انصاف کے رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر مراد راس نے ایک تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صوبائی دارالحکومت سمیت دیگر شہروں میں واقع ٹیچنگ اور ڈسٹرکٹ ہسپتالوں میں قائم ایمرجنسی یونٹوں کی اپ گریڈیشن کا منصوبہ دم توڑ گیا ہے ایمرجنسی وارڈوں میں الگ سے پروفیسرز کنسلٹنٹ اور سرجنز تعینات کئے جانے تھے مگر یہ منصوبہ فائلوں میں دفن ہو کر رہ گیا ہے جس سے ایمرجنسی وارڈوں میں مریضوں کی شرح مواد میں خوفناک حد تک اضافہ ہو گیا ہے گزشتہ پانچ سالوں میں مریضوں کی اموات میں پچاس سے 60فیصداضافہ ہو گیا ہے جس کی بنیادی وجہ ایمرجنسیوں میں سینئرز ڈاکٹرز کا نہ ہونا ہے مریضوں پر تجربات ، ہاؤس افسرز اور میڈیکل افسرز کرتے ہیں بعض اوقات مریض کو اوور ڈوز کیا جاتا ہے جس سے وہ جان کی بازی ہار جاتا ہے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اگر ایمرجنسیوں کی اَپ گریڈیشن کا منصوبہ بن جاتا تو ایمرجنسی میں شرح اموات کو50فیصد کم کیا جا سکتا ہے۔ ایمرجنسی کی اَپ گریڈیشن کے منصوبے کا آغاز میو ہسپتال سے ہونا تھا جو نہیں ہو سکا۔

Most Popular