لیگی ایم پی اے کے گھر میں قتل ہونی والے ملازم پر تشدد کی تصدیق ہوگئی۔

لیگی ایم پی اے کے گھر میں قتل ہونی والے ملازم پر تشدد کی تصدیق ہوگئی۔

مسلم لیگ سے تعلق رکھنے والی خاتون رکن پنجاب اسمبلی شاہ جہان کے گھر میں قتل ہونے والے کمسن ملازم کی ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں تشدد کی تصدیق کی گئی ہے۔لاہور کے علاقے اکبری منڈی میں رہائش پذیر مسلم لیگ سے تعلق رکھنے والی رکن پنجاب اسمبلی شاہ جہان کے گھر سے پولیس نے 16 سالہ ملازم اختر کی لاش برآمد کی تھی جس کی ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آگئی۔پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق اختر کی موت اسپتال لانے سے 8 گھنٹے پہلے ہی ہوچکی ہے جب کہ کسن بچے کی موت واقعے کے روز رات 11 بجے کے قریب ہوئی۔رپورٹ کے مطابق ملازم کی دائیں ٹانگ پر تشدد کے واضح نشانات پائے گئے جب کہ اختر کے جسم پر پرانی چوٹوں کے بھی متعدد نشانات موجود تھے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مقتول اختر کے معدے میں بھی سوزش پائی گئی۔خیال رہے کہ پولیس نے مقتول اختر کے قتل کا مقدمہ اہلخانہ کی مدعیت میں ایم پی اے شاہ جہان کی صاحبزادی کے خلاف درج کیا تھا تاہم رکن پنجاب اسمبلی کا نام ایف آئی آر میں شامل نہیں کیا گیا جب کہ اب تک کوئی گرفتاری بھی عمل میں نہیں لائی جاسکی۔

Most Popular