ذیابیطس سے بچاؤکا عالمی دن اقوام متحدہ کی سفارش پر ہر برس 14 نومبرکومنایاجاتا ہے

ذیابیطس سے بچاؤکا عالمی دن اقوام متحدہ کی سفارش پر ہر برس  14 نومبرکومنایاجاتا ہے

ذیابیطس سے بچاؤکا عالمی دن اقوام متحدہ کی سفارش پر ہر برس چودہ نومبرکومنایاجاتا ہے۔ اس دن کے منانے کی ابتدا دوہزار سات سے ہوئی تھی۔ شعبہ طب میں یہ مرض خاموش قاتل کہلاتا ہے، مرض پر قابوپانے کے لیے انسولین استعمال کی جاتی ہے، دنیا میں ذیابیطس کے مریضوں کے لیے پہلی بار انسولین انیس سو تئیس میں متعارف کرائی گئی۔ عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں کروڑوں افراد ذیابیطس کے مرض میں مبتلا ہیں اس مرض سےتقریبا اسی فیصد اموات کم آمدنی والے ممالک میں ہوتی ہیں۔ مناسب اقدامات نہ کئے گئےتودوہزارتیس تک ذیا بیطس دنیا کی ساتویں بڑی جان لیوا بیماری بن جائے گی،طبی ماہرین کے مطابق موٹاپا،تمباکو نوشی اور ورزش نہ کرنا ذیابیطس کی اہم وجوہات ہیں، ڈاکٹرزکے مطابق مرض لاحق ہونے کے باوجود بھی معمول کے مطابق زندگی گزاری جا سکتی ہے

Most Popular