طيبہ تشدد کيس کے مرکزی ملزم معطل جج راجہ خرم نے اسلام آباد ہائيکورٹ کے دس مئی کے فيصلے کو چيلنج کرديا

طيبہ تشدد کيس کے مرکزی ملزم معطل جج راجہ خرم نے اسلام آباد ہائيکورٹ کے دس مئی کے فيصلے کو چيلنج کرديا

طیبہ تشدد کیس کے ملزم معطل جج راجہ خرم نے اسلام آباد ہائيکورٹ کی جانب سے فرد جرم عائد کرنے اور صلح نامے کو مسترد کرنے کے خلاف انٹرا کورٹ اپيل دائرکردی۔ انٹرا کورٹ اپيل ميں ميں معطل جج نے دس مئی کے عدالتے فيصلے کو معطل کرنے کي اپيل کی ہے، عدالت نے اپيل کوسماعت کيلئے مقررکرديا ہے، اپيل کی سماعت جسٹس عامر فاروق کی سربراہی میں دورکنی بینچ کرے گا ،واضع رہے کہ اسلام آباد ہائيکورٹ نے منگل کے روزفيصلہ سناتے ہوئے طيبہ کے والدين اورملزمان کے درميان صلح نامہ مسترد کرتے ہوئے معطل جج راجہ خرم علی اوران کی اہليہ ماہين ظفرپرفرد جرم عائد کی تھی ۔ ملزمان نے صحت جرم سے انکار کيا تھا اسلام آباد ہائيکورٹ نے کيس کے گواہاں کو انيس مئی کو طلب کررکھا ہے۔

Most Popular