دبئی ٹیسٹ میں فتح کی امیدیں روشن، پاکستان نے تین سو سترہ رنز ہدف کے تعاقب میں پانچ وکٹوں پر ایک سو اٹھانوے رنز بنا لیے

 دبئی ٹیسٹ میں فتح کی امیدیں روشن، پاکستان نے تین سو سترہ رنز ہدف کے تعاقب میں پانچ وکٹوں پر ایک سو اٹھانوے رنز بنا لیے

دبئی ٹیسٹ کے چوتھے دن کا آغاز ہوا تو سری لنکا نے چونتیس رنز پر پانچ وکٹوں کے خسارے سے سکور آگے بڑھانا شروع کیا۔ لیکن پاکستانی باؤلروں کی شاندار کارکردگی کی بدولت سری لنکن اننگ صرف چھیانوے رنز پر محدود ہو گئی۔ پہلی اننگ میں سری لنکا کے چارسو بیاسی رنز کے جواب میں دوسو باسٹھ رنز پر آؤٹ ہونے کے بدولت پاکستان کو دوسری اننگ میں جیت کیلیے مجموعی طور پر تین سو سترہ رنز کا ہدف ملا۔ تاہم بلے بازوں نے قوم کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ صرف باون رنز پر ہی پانچ کھلاڑی پویلین واپس لوٹ گئے۔ اظہرحسین، بابر اعظم، حارث سہیل، شان مسعود، سمیع اسلم دوسرے ٹیسٹ میں بھی ناکام رہے۔ ایک ایسے موقع پر جب پاکستانی ٹیم کے سر پر دوسرے ٹیسٹ میں بھی یقینی شکست کے سائے منڈلا رہے تھے، اسدشفیق اور کپتان سرفرازاحمد نے پاکستانی اننگ کو سنبھالا دیا۔ دونوں بلے بازوں نے سکور آہستہ آہستہ آگے بڑھانا شروع کیا تو سری لنکن ٹیم کے متوقع کامیابی پر کھلتے چہرے مرجھانے لگے۔ دونوں بلے بازوں نے ذمہ دارانہ بیٹنگ سے اپنی نصف سنچریاں مکمل کیں۔ چوتھے روز کا کھیل ختم ہوا تو پاکستان نے پانچ وکٹوں پر ایک سو اٹھانوے رنز بنا لیے تھے۔ اسدشفیق چھیاسی جبکہ سرفراز احمد ستاون رنز پر ناٹ آؤٹ ہیں۔ یوں پاکستان کو جیت کیلیے ایک سو انیس رنز درکار ہیں۔

Most Popular