پی سی بی نے گریڈ ٹو کی ٹیموں کے منیجرز کی تعیناتی کے لیے نیا قانون متعارف کروا دیا۔

پی سی بی نے گریڈ ٹو کی  ٹیموں کے منیجرز کی تعیناتی کے لیے نیا قانون متعارف کروا دیا۔

لاہور(حافظ محمد عمران/نمائندہ سپورٹس) پاکستان کرکٹ بورڈ نے گریڈ ٹو میں شرکت کرنیوالے محکموں اور قائداعظم ٹرافی کے لیے ٹیموں کے منیجرز کی تعیناتی کے لیے نیا قانون متعارف کروایا ہے۔ قائد اعظم ٹرافی کے لیے کسی بھی ٹیم کے مینجر کی مناسب تعلیمی قابلیت کو بنیادی شرط قرار دیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نئے قوانین کے تحت ٹیم مینجر کے لیے کم سے کم ایف اے کی تعلیمی شرط رکھی گئی ہے۔ سینئر ون ڈے ٹورنامنٹ میں بھی مینجر کا ایف اے پاس ہونا ضروری ہے۔ دوسری طرف گریڈ ٹو میں شرکت کرنیوالے کھلاڑیوں کے لیے بھی خوشی کی خبر ہے۔ ذرائع کیمطابق گریڈ ٹو کھیلنے والے محکموں کو بھی کرکٹرز کو کم از کم ایک سال کا کنٹریکٹ دینے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ گریڈ ٹو کھیلنے والے تمام سرکاری اور پرائیویٹ محکمے اپنے کھلاڑیوں کے ساتھ ایک سال کے معاہدے کے پابند ہونگے۔ اس سطح پر بھی کرکٹرز کو سالانہ معاہدے کے تحت ہر ماہ تنخواہ دی جائیگی۔ گریڈ ٹو کھیلنے والے سرکاری اداروں کی ٹیموں کو اپنے کھلاڑیوں کو کم از کم تیس ہزار تنخواہ دینا لازمی قرار دیا گیا ہے جبکہ پرائیویٹ اداروں کی ٹیموں کو اپنے کھلاڑیوں کی کم از کم ماہانہ تنخواہ پچیس ہزار مقرر کرنا ہو گ

Most Popular