کھیلنے جانے والے تینوں ٹی ٹوئنٹی میچز کو عالمی کرکٹ کا درجہ دیا گیا ہے

کھیلنے جانے والے تینوں ٹی ٹوئنٹی میچز کو عالمی کرکٹ کا درجہ دیا گیا ہے

ماضی میں جتنے بھی دورے ہوئے ہیں ان میں یا تو فرسٹ کلاس میچز کھیلے گئے یا کھیلے گئے ون ڈے میچوں کو انٹرنیشنل میچز کا درجہ حاصل نہیں تھا۔ انٹرنیشنل الیون کے پاکستان آنے کا سلسلہ فروری 1962 میں شروع ہوا تھا جب انٹرنیشنل الیون نے ایشیا، افریقہ اور نیوزی لینڈ کے دورے کے سلسلے میں ڈھاکہ اور کراچی میں دو فرسٹ کلاس میچز کھیلے۔۔۔۔فروری 1968 میں مکی سٹیورٹ کی قیادت میں انٹرنیشنل الیون نے ایک فرسٹ کلاس میچ بی سی سی پی الیون کے خلاف کراچی میں کھیلا۔۔۔دسمبر 1970 میں گیری سوبرز کی کپتانی میں ریسٹ آف دی ورلڈ الیون نے پاکستان کے خلاف کراچی میں چار روزہ فرسٹ کلاس میچ کھیلا ۔۔۔
فروری 1971 میں انٹرنیشنل الیون کے نام سے ٹیم پاکستان آئی جس کے کپتان انگلینڈ کے مکی سٹیورٹ تھے،،، دورے میں تین فرسٹ کلاس میچز کراچی ڈھاکہ اور لاہور میں کھیلے گئے۔نومبر 1973 میں ویسٹ انڈیز کے روہن کنہائی کی قیادت میں ریسٹ آف دی ورلڈ الیون نے پاکستان کا دورہ کیا اور کراچی اور لاہور میں دو فرسٹ کلاس میچز کھیلے۔ نومبر 1976 میں آسٹریلوی شہرۂ آفاق فاسٹ بولر کیتھ ملر کی قیادت میں انٹرنیشنل الیون نے پاکستان کا دورہ کیا اور سات مختلف شہروں میں 40 اوورز پر مشتمل ون ڈے میچز کھیلے۔۔۔ستمبر 1981 میں روہن کنہائی کی قیادت میں انٹرنیشنل الیون پاکستان آئی اور اس نے یہاں تین فرسٹ کلاس اور تین ون ڈے میچز کھیلے۔

Most Popular