پشاور زلمی، لاہور قلندر کے مالکان نے جنوبی افریقہ لیگ کی ٹیمیں خرید لیں۔

پشاور زلمی، لاہور قلندر کے مالکان نے جنوبی افریقہ لیگ کی ٹیمیں خرید لیں۔

لندن میں ہونے والی ایک تقریب میں جنوبی افریقہ کی گلوبل ٹی20لیگ کی آٹھ ٹیموں کا اعلان کیا گیا، جن میں سے صرف دو کے مالکان کا تعلق جنوبی افریقہ سے ہے۔پاکستان سپر لیگ کی دو فرنچائزز کے مالکان بھی اس موقعے پر موجود تھے اور انھوں نے بھی ایک ایک ٹیم خرید لی۔ پشاور زلمی کے مالک جاوید آفریدی نے بینونی کی ٹیم، جب کہ لاہور قلندرز کے فواد رانا نے ڈربن کی ٹیم خریدی۔لاہور قلندرز کے مالک فواد رانا نے ڈربن کی فرنچائز خریدی ہے جس کے آئیکون پلیئر ہاشم آملا ہیں جبکہ پشاور زلمی کے جاوید آفریدی نے بینونی فرنچائز اپنے نام کی جس کے آئیکون پلیئر کوئنٹن ڈی کک ہیں۔گذشتہ روز پشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی نے ایک ٹویٹ کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ 'آج ایک بڑی خبر آنے والی ہے۔ جاوید آفریدی، زلمی کے مداحوں کو زیادہ انتظار نہ کروا۔' سیمی نے اس ٹویٹ میں #ZalmiGoesGlobal کا ہیش ٹیگ استعمال کیا تھا۔اس کے علاوہ کولکتہ نائٹ رائیڈرز کے مالک شاہ رخ خان نے بھی ایک ٹیم خریدی جس کا تعلق کیپ ٹائون سے ہے۔ یاد رہے کہ شاہ رخ خان اس کے علاوہ ویسٹ انڈیز کی ٹرینیڈاڈ فرنچائز کے بھی مالک ہیں۔اس کے علاوہ انڈین پریمیئر لیگ کی ٹیم دہلی ڈیئر ڈیول کی مالک کمپنی جی ایم آر نے جوہانسبرگ کی ٹیم کے حقوق حاصل کر لیے۔ادھر جنوبی افریقہ کے دو بزنس مینوں عثمان عثمان اور مشتاق نے بالترتیب پریٹوریا اور اسٹیلن بوش فرنچائز خاصل کی، ہانگ کانگ کے سشیل کمار نے بلوم فونٹین اور اجے سیٹھی نے پورٹ ایلزبتھ کی ٹیم خریدی ہے۔یاد رہے کہ ایونٹ رواں برس کے آخر میں کھیلا جائے گا۔ ٹورنامنٹ کیلیے 400 جنوبی افریقی اور غیرملکی کرکٹرز نے رجسٹریشن کرائی ہے۔فی الحال یہ واضح نہیں ہے کہ ان ٹیموں میں کون سے بین الاقوامی کھلاڑی شامل ہوں گے۔ تاہم کرکٹ سائوتھ افریقہ کے صدر کرس نینزانی نے امید ظاہر کی کہ اس ایونٹ کو بین الاقوامی تعاون حاصل ہو گا۔انھوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم تمام کرکٹ بورڈز کا شکریہ ادا کرتے ہیں اور امید رکھتے ہیں کہ وہ ہماری اسی طرح سے مدد کریں گے جیسے ہم نے ان کی لیگز کی مدد کی ہے۔ ہمیں توقع ہے کہ وہ اسے کامیاب بنانے میں ہمارا ساتھ دیں گے۔یہ ٹورنامنٹ نومبر میں شروع ہو گا۔

Most Popular