ملک کے بیشتر علاقے شدید سردی کی لپیٹ میں ہیں

ملک کے بیشتر علاقے شدید سردی کی لپیٹ میں ہیں

ملک کے بیشتر علاقوں میں سردی کی شدید لہر جاری ہے، شدید سردی کے باعث معمولات زندگی بھی متاثر ہو رہے ہیں، شمالی علاقوں میں برفباری کا سلسلہ بھی جاری ہے، پہاڑوں، گلیوں اور سڑکوں پر برف کی تہہ جم گئی ہے، جیسے سفید لباس پہن رکھا ہو، آج سب سے زیادہ سردی سکردو میں ہے، جہاں پارہ منفی بارہ تک گر گیا ہے، استور اور ہنزہ میں درجہ حرارت منفی دس، گوپس اور گلگت منفی سات، دیر، کالام، کوئٹہ اور راولاکوٹ منفی پانچ، پاراچنار منفی چار، دالبندین منفی تین، ژوب، قلات، مالم جبہ اور بونجی منفی دو، جبکہ سبی، میرکھانی اور ایبٹ آباد میں منفی ایک ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے،محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم سرد اور خشک رہے گا،، اگلے تین سے چار روز کے دوران بھی ملک کے بیشتر علاقوں میں شدید سردی کی لہر جاری رہنے کا امکان ہے، گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بھی ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم سرد اور خشک رہا 


پنجاب، خیبر پی کے اور بالائی سندھ کے بیشتر علاقوں میں دھند کا راج ہے، جس سے معمولات زندگی متاثر ہو رہے ہیں، جبکہ لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں، ڈرائیورز کو بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

محکمہ موسمیات کے مطابق پنجاب، خیبر پی کے اور بالائی سندھ کے بیشتر علاقوں پر دھند کے بادل چھائے ہیں، جس سے معمول کی سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں، پشاور میں حدِ نگاہ ایک سو میٹر رہ گیا، جبکہ بہاولپور میں تین سو، راولپنڈی اور سکھر سات سو، منگلا آٹھ سو، لیہ، اوکاڑہ اور رحیم یار خان ایک ہزار، جہلم اور موہنجوداڑو گیارہ سو، سیالکوٹ اور فیصل آباد بارہ سو، ملتان، لاہور اور شہید بینظیرآباد میں حدنگاہ پندرہ سو میٹر ہے،دھند کے بادلوں نے سورج کی کرنوں کو زمین پر پڑنے سے کیا روکا، روک گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے، ڈرائیورز کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بھی پنجاب کے بیشتر میدانی علاقوں، پشاور ڈویژن اور بالائی سندھ میں رات اور صبح کے اوقات میں شدید دھند کا سلسلہ جاری رہنے کی توقع ہے،،گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بھی پنجاب کے میدانی علاقے، پشاور ڈویژن اور بالائی سندھ شدید دھند کی لپیٹ میں رہے ۔۔

Most Popular