ایف آئی اے میں اندھیر نگری چوپٹ راج۔ 14 سال تک پرکشش عہدوں پر تعینات ڈپٹی ڈائریکٹر کی ڈگری جعلی نکلی۔

Sep 01, 2018 | 17:53

جعلی ڈگری کیس میں ملوث ڈپٹی ڈائریکٹر نعمان اشرف بودلہ کے خلاف چالان میں سنسی خیز انکشافات سامنے آیے ہیں نعمان بودلہ نے نیو پورٹس نامی یونیورسٹی کے جعلی پرویزنل سرٹیفیکٹ پر ایف آئی اے میں نوکری حاصل کی۔ ایک نہیں دوبار۔ چالان کے متن کے مطابق جعلی ڈگری کے حامل ڈپٹی ڈائریکٹر نے تعیناتی کے دوران قومی خزانے کو ایک کروڑ سے زائد کا چونا لگایا۔ چالان
میں کہا گیا ہے کہ سرکاری خرچے پر ملزم نعمان بودلہ کے سینکڑوں غیر ملکی دورے۔ لاتعداد تربیتی کورسز بھی خوب انجوائے کئے۔ چالان کے مطابق
جعلی ڈگری کے حامل ُڈپٹی ڈائریکٹر کی مستقل ملازمت کے لئے ساہیوال سےسابق ایم این اے اسلم بودلہ بھی سفارشیوں میں شامل ہیں چالان کے مطابق ایچ ای سی کا ڈپٹی ڈائریکٹر عابد حسین بھی شریک جرم۔ آنکھیں بند کرکے جعلی پرویزنل سرٹیفیکٹ کی تصدیق کرڈالی۔ چالان کے مطابق
نعمان بودلہ۔ ڈپٹی ُڈائریکٹر کاونٹرٹیررزم ونگ اور سائبر کرائم میں بھی تعینات رہے۔ چالان کے متن میں کہا گیا ہے کہ چالان میں نعمان بودلہ کی تقرری کرنے والی سلیکشن کمیٹی اور جعلی ڈگری جاری کرنے والی یونیورسٹی کے کرداروں کو بھی تفتیش طلب معاملہ قرار دیا ہے۔۔۔۔

مزیدخبریں