سپریم کورٹ میں ڈی پی او پاکپتن تبادلہ ازخود نوٹس کیس کی سماعت

Sep 01, 2018 | 20:33

عدالت کی جانب سے بیان حلفی جمع کرانے کے لئے ہفتہ یکم ستمبر تک کا وقت دیا گیا تھا۔ ڈی پی او پاک پتن،آر پی او ساہیوال اور سابق ڈی پی او رضوان عمر گوندل کی جانب سے بیان حلفی سربمہر لفافے میں جمع کروائے گئے، چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ڈی پی او کے تبادلے پر ازخودنوٹس لیا تھا۔ سپریم کورٹ میں ڈی پی اوپاکپتن تبادلہ ازخود نوٹس کیس میں انٹیلی جنس ادارے کے اہلکار طارق، احسن جمیل گجر اور ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹر پنجاب شہزاد سلطان کو طلب کیا ہے۔ چیف جسٹس نے خاور مانیکا اور وزیراعلیٰ کے پی ایس او حیدرکو بھی پیر کے روز طلب کیا ہے۔

مزیدخبریں