شریف خاندان شوگر ملز کیس:شوگر مل منتقلی کا آپشن اس لئے دیا ، اصل بات نیک نیتی یا بدنیتی کی ہے۔ چیف جسٹس

Aug 02, 2018 | 17:01

چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے شریف خاندان شوگرملزکیس کی سماعت کی، وقاص شوگر مل کے وکیل نے کیس ملتوی کرنے کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ کیس کی تیاری کیلئے وقت چاہیے، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئےکہ شوگرملوں نے ایک سیزن مفت میں کرشنگ کرلی ہے، شوگرملوں کوواپس اصل جگہ منتقل کرنے کا آپشن موجود ہے، وکیل نے موکل سے مشورہ کرنے کا موقف اپنایا تو چیف جسٹس نے کہا کہ موکل کوساتھ لیکرآنا تھا،کیا موکل کوعدالت سے شرم آتی ہے، کیس لڑنا ہے تویہ رعایت پھر نہیں ملے گی،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ حسیب وقاص شوگرملزکے بورڈ آف ڈائریکٹرزنوازشریف اوران کے خاندان کے ہیں، اصل بات نیک نیتی یا بدنیتی کی ہے، شوگرمل کے بجائے پاورپلانٹ لگا کردھوکہ دیا جاتارہا، شوگرمل منتقلی کا آپشن اسلئے دیا، وکیل نے بیرون ملک جانے اورمشاورت کیلئے دس روزکی مہلت مانگی توچیف جسٹس نے وکیل کی چھٹیاں منسوخ کرتے ہوئے کہا کہ وہ خود چھٹی نہیں کرتے، التواء لینی ہے تو10لاکھ ڈیمزفنڈ میں جمع کرائیں ،عدالت نے شریف خاندان کو 10لاکھ روپے ڈیمزفنڈزمیں جمع کرانے اور تحریری جواب جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 20 اگست تک ملتوی کردی۔

مزیدخبریں