ضیاالدین اسپتال،شرجیل انعام میمن کے کمرہ سے شراب کی بوتلیں ملنے کا معاملہ آئی جی سندھ نے واقعے کی تحقیقات کے لیے اعلی سطح کی کمیٹی قائم کردی،ذرائع

Sep 02, 2018 | 12:54

ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈاکٹر امیر شیخ نے ڈی آئی جی ساؤتھ جاوید عالم اوڈھو کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی جب کہ اس کا نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن ساؤتھ عبداللہ جان اور ایس ایس پی انویسٹی گیشن ایسٹ شبیر میمن بھی تحقیقاتی ٹیم کا حصہ ہیں جب کہ تحقیقاتی ٹیم کراچی پولیس کے کسی بھی افسر یا رکن سے معاونت حاصل کرسکتی ہے۔ دوسری جانب پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ شرجیل میمن کے کمرے سے ملنے والی بوتلوں کا کیمیکل ایگزامینر سے شہد، زیتون کے تیل کا تجزیہ کرایا جائے گا جب کہ شرجیل میمن کے خون کے نمونے بھی ٹیسٹ کے لیے نجی اسپتال بھیجے گئے ہیں۔ نجی اسپتال سے شرجیل میمن کی ٹیسٹ رپورٹس پیر کو ملیں گی۔ یاد رہے کہ گزشتہ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے کلفٹن میں واقع ضیاء الدین اسپتال کا اچانک دورہ کیا جہاں زیرعلاج پیپلز پارٹی کے رہنما شرجیل انعام میمن کے کمرے سے شراب کی بوتلیں، سگریٹس اور منشیات برآمد ہوئیں۔ دوسری جانب شرجیل میمن نے شراب برآمد ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بوتلوں میں شراب نہیں بلکہ شہد اور زیتون کا تیل تھا۔ پولیس نے سابق صوبائی وزیر کو سینٹرل جیل منتقل کر کے نجی اسپتال میں ان کا کمرہ سیل کردیا۔

مزیدخبریں