محمود عباس قوم سے خیانت کے مرتکب ہورہے ہیں۔ حماس

Sep 04, 2018 | 11:05

اسلامی تحریک مزاحمت (حماس)نے صدر محمود عباس کے اس بیان کی شدید مذمت کی ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ وہ اسرائیل اور اردن کیساتھ کنفیڈریشن کے قیام، فلسطینی اراضی کی تقسیم اور تبادلے پر تیار ہیں اور اسرائیل کے ساتھ جامع سکیورٹی تعاون جاری رکھے ہوئے ہیں۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق حماس کے ترجمان حازم قاسم نے ایک بیان میں کہا کہ فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے اسرائیلی وفد سے ملاقات میں جو موقف اختیار کیا ہے وہ فلسطینی قوم سے خیانت پر مبنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر عباس کی طرف سے اردن اور اسرائیل کے ساتھ کنفیڈریشن کے قیام کی تجویز سے اتفاق صہیونی ریاست کو خطے میں اہمیت دینے کے مترادف ہے۔ صدر عباس امریکا اور اسرائیل کو قضیہ فلسطین کے تصفیے کی سازشوں کی حوصلہ افزائی کررہے ہیں۔خیال رہے کہ گذشتہ روز فلسطینی صدر محمود عباس نے کہا تھا کہ وہ اسرائیل کے ساتھ اراضی کے تبادلے اور اردن اور اسرائیل کے اشتراک سے کنفیڈریشن کے قیام پر تیار ہیں۔

مزیدخبریں