پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جا رہا ہے

05 فروری 2018 (08:20)

مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر ہندو بنیے کا ظلم نئی بات نہیں ،، یہ سلسلہ گزشتہ ستر سال سے جاری ہے، کشمیریوں پر ظلم و ستم کی تاریخ میں اکیس جنوری انیس سو نوے کو کوئی نہیں بھلا سکتا جب نہتے کشمیریوں کا بدترین قتل عام کیا گیاانیس جنوری انیس سو نوے کو بھارت سرکار نے مقبوضہ کشمیر کے کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کو عہدے سے ہٹا کر وادی میں گورنر راج نافذ کردیا،، گورنر جگموہن ملہوترا جس کی پہچان ہی مسلم دشمنی تھی نے مقبوضہ وادی میں ریاستی دہشتگردی کا سلسلہ شروع کیا،، گھر گھر تلاشی لی گئی، خواتین کو بے آبرو کیا گیا،، اس ظلم کے خلاف اکیس جنوری انیس سو نوے کو کشمیریوں نے پر امن احتجاج کیا،، انتہا پسند ہندو گورنر نے پر امن مظاہرین پر سیدھی گولیاں چلوادیں،، اس قتل عام میں پچاس کشمیری شہید اور سینکڑوں کی تعداد میں زخمی ہوئے۔کشمیر میں اکیس جنوری کے قتل عام پر پاکستان میں شدید احتجاج کیا گیا،، حکومت نے آفیشل طور پر پانچ فروری کو یوم یکجہتی کشمیر کے طور پر منانے کا اعلان کردیا،، اس دن کے بعد آج تک پاکستانی ہر سال پانچ فروری کو اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ یوم یکجہتی کے طور پر مناتے ہیں

آزادی سے محروم کشمیر میں گزشتہ انتیس سال سے ظلم و بربریت کا سلسلہ جاری ہے،، انیس سو نواسی میں شروع ہونے والی ریاستی دہشتگردی میں اب تک چورانوے ہزار نو سو چھے کشمیری جامِ شہادت نوش کرچکے ہیں،، برہان وانی کی شہادت کے بعد درندگی کی نئی لہر ایک سو ستتر معصوم جانیں نگل چکی ہے 

مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ ستر سال سے حق آزادی سے محروم کشمیریوں کا خون پانی سے بھی سستا ہے،، انیس سو نواسی میں شروع ہونے والا ریاستی دہشتگردی کا سلسلہ تاحال جاری ہے،، چورانوے ہزار نو سو چھے کشمیری ریاستی دہشتگردی کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں،، بھارتی فورسز کے ہاتھوں بائیس ہزار آٹھ سو چونسٹھ خواتین نے اپنی عزتیں لٹائیں،، درندہ صفت بھارتی فورسز نے گیارہ ہزار بیالیس خواتین کی اجتماعی آبرو ریزی کی آٹھ جولائی دو ہزار سولہ کو تحریک آزادی کے پوسٹر بوائے برہان وانی کی شہادت کے بعد مودی سرکار پاگل ہوگئی،، کشمیریوں پر ظلم و ستم کا وہ سلسلہ شروع کیا کہ چنگیز خان بھی شرما جائے،، ڈیڑھ سال کے دوران ایک سو ستتر معصوموں کا خون بہایا جاچکا ہے،، ریاستی فورسز کی جانب سے پیلٹ گن کا بھی بے دریغ استعمال کیا گیا،، جس کی وجہ سے آٹھ ہزار تین سو چھپن جوان متاثر ہوئے،، اس عرصے کے دوران سات سو ستاون خواتین کی آبروریزی کی گئی یوم یکجہتی کشمیر ،، اپنے بھائیوں کے ساتھ تجدیدِ عہدِ وفا کا دن ہے،، اس دن ہم سب یہ عہد کرتے ہیں کہ اپنی شہہ رگ کو بھارتی قبضے سے چھڑا کر دم لیں گے