ججز کو چاہیے آرٹیکل 62اور63 کو چھیڑیں نہ اس پر فیصلہ دیں۔

Apr 06, 2018 | 14:30

شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے دوران نیشنل پارٹی کے صدر میر حاصل بزنجو اور پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی بھی عدالت پہنچے، نواز شریف کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میر حاصل بزنجو کا کہنا تھا کہ نوازشریف روزپیش ہوتے ہیں عدلیہ کو اس عمل کو سراہناچاہیے ،ایک ہفتے سے جوجرح چل رہی ہے لگتا ہے کیس میں کچھ نہیں ہے۔
پشتون خواہ میپ کے سربراہ محمود خان اچکزئی کا کہنا تھا کہ ججز اور پارلیمنٹیرینز آئین اور قانون پر حلف اٹھاتے ہیں،ہم آئین اور قانون پر عمل چاہتے ہیں، پارلیمنٹ کاکام ہے قانون بناناسب اداروں کاکام ہے اس پرعمل کرنا،ہم آئین کے ساتھ کھڑے ہیں اورکھڑے رہیں گے۔ پارلیمنٹیرینز آئین کے دفاع کی بات کرتے ہیں توکرنی چاہیے۔ اس موقع پر مشاہد حسین سید کا کہنا تھا کہ پاکستان متحد ہے، نواز شریف کا بیانیہ قوم کا بیانیہ بن چکاہے

مزیدخبریں