ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کو 10 سال جب کہ مریم نواز کو 7 سال قید کی سزا سنادی ہے ۔

Jul 06, 2018 | 16:26

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سنایا۔ نواز شریف اور مریم نواز لندن جب کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر مانسہرہ میں موجودگی کی وجہ سے پیش نہیں ہوئے۔ فیصلہ سنائے جانے کے دوران میڈیا نمائندوں اور صحافیوں کو کمرہ عدالت میں آنے کی اجازت نہیں تھی۔

ضرور پڑھیں: Labb Azaad 22 September 2018

ایون فیلڈ ریفرنس پر تاریخی فیصلہ سنا دیا گیا۔ نواز شریف اور مریم نواز مجرم قرار، نواز شریف کو 10 سال قید کی سزا سنا دی گئی۔ مریم نواز کو 7 سال قید بامشقت کی سزا، مریم نواز کو کیلبری فونٹ میں مزید 1 سال قید کی بھی سزا ہوئی ہے۔ مریم نواز کو مجموعی طور پر 8 سال قید کی سزا سنائی گئی۔ مجرموں کو 10ملین پاؤنڈ جرمانہ کی سزا بھی شامل ہے۔ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو ایک سال قید کی سزا دی گئی ہے۔ 2 ملین مریم نواز اور 8 ملین پاؤنڈ نواز شریف کو جرمانے کی سزا اور عدالت نے لندن فلیٹس ضبط کرنے کا حکم دے دیا ۔ فیصلے سے ثابت ہوا لندن فلیٹس کرپشن سے بنائے گئے، نیب پراسیکیوٹر

 احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے 9 ماہ 20 دن تک ریفرنس کی سماعت کی اور 3 جولائی کو فیصلہ محفوظ کیا۔ اس دوران مجموعی طور پر 18 گواہوں کے بیانات قلمبند کیے گئے جن میں پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاء بھی شامل تھے۔

مزیدخبریں