آئی سی ٹی مقابلوں سے تعلیم کامعیار بہتر کرنے میں مدد ملے گی۔ شفقت محمود

Sep 06, 2018 | 15:44

وفاقی وزیر برائے تعلیم وفنی تربیت شفقت محمود نے کہاہے کہ آئی سی ٹی مقابلوں سے تعلیم کامعیار بہتر کرنے میں مدد ملے گی ،اڑھائی کروڑ سکولوں سے باہربچوں ،یکساں نظام تعلیم اورتعلیم کامعیار بہتر کرنابڑے چیلنجز ہیں ۔ان خیالات کااظہاروفاقی وزیر برائے تعلیم وفنی تربیت شفقت محمود نے ایچ ای سی میں آئی سی ٹی کمپیٹیشن کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب سے چینی سفیریاؤجین،چیرمین ایچ ای سی ڈاکٹر چارق بنوری ودیگرنے بھی خطاب کیا۔شفقت محمودنے کہاکہ ہمارے طلبہ نے پچھلے سال آئی سی ٹی کمپیٹیشن میں پوری دنیا میں تیسری پوزیشن حاصل کی جو بہت اعزاز کی بات ہے۔چین کے ساتھ ہمارے تعلقات سی پیک کے بعد مزید مضبوط ہونگے۔اس بار آئی سی ٹی مقابلے میں دس ہزار طلبہ نے حصہ لیں گے جو بہت اچھی بات ہے۔پاکستان میں بہت زیادہ ٹیلنٹ موجود ہے اس کو آگے لانے کی ضرورت ہے۔بدقسمتی سے ہمارے ملک میں اڑھائی کروڑ بچے سکول نہیں جاتے۔ان کو سکولوں میں لے کرآبا بڑا چیلنج ہے ہم پورے ملک میں ایک جیسا نصاب اور ایک جیسا سکول چھوڑنے کا سرٹیفیکیٹ لا رہے ہیں پاکستا ن میں مختلف سکولوں کے نظام رائج ہیں ہم ایک سکول کانظام لانا چاہتے ہیں تعلیم کامعیار بہتر کرنا بھی ایک چیلنج ہے اس طرح کے مقابلوں سے تعلیم کامعیار بہتر کرنے میں مدد ملے گی ۔میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ وزارت تعلیم جہاں تک ممکن ہو سکا آپ کی ہر ممکن مدد کرے گی۔ چیرمین ایچ ای سی ڈاکٹر طارق بنوری نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کل 3سوطلبہ میں سے50طلبہ مقابلے میں یہاں تک پہنچے ہیں امید ہے اس بار ورلڈ مقابلے میں طلبہ پاکستان کے لیے ایک گولڈ میڈل لے کر آئیں گے دیگر تعلیمی اداروں کو بھی ان مقابلوں میں شامل ہوناچاہئے ان مقابلوں سے پاکستان چین تعلقات مزید مضبوط ہوں گے پاکستان مزید ترقی کریگا ۔پاکستان میں تعینات چینی سفیریاوجین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ سی پیک سے دونوں ملکوں کے درمیاں دستی کا رشتہ مزید مضبوط ہو گا سی پیک سے دنوں ملکوں کو فائدہ ہوگا۔مجھے اس تقریب میں مہمان بنے پر خوشی ہے اور اس طرح کے تقریبات ہونی چایئے جس سے طلبہ کی صلاحیتوں میںاضافہ ہوتاہے ۔

مزیدخبریں