عراق میں احتجاجی مظاہرے شدت اختیار کر گئے،

Sep 07, 2018 | 07:42

بصرہ کے قریب علاقے کی سب سے اہم بندرگاہ کو شدید احتجاجی مظاہروں کے باعث بند کر دیا گیا، جبکہ صوبائی حکومت کے ہیڈکوارٹر کو مظاہرین نے نذرآتش کر دیا، کرپشن اور بنیادی سہولیات کے فقدان کے باعث گزشتہ ماہ سے جاری احتجاج میں کمی نہیں آسکی، ام قصر بندرگاہ کے اہم داخلی راستے بند ہونے کی وجہ سے ملک کے دیگر علاقوں کو مختلف اشیا کی فراہمی بند ہو چکی ہے، حساس حالات کے پیش نظر بعض مقامات پر کرفیو بھی نافذ کر دیا گیا ہے، یہاں تک کہ شہریوں کو پانی کی فراہمی میں بھی بندش کا سامنا ہے، جبکہ آلودہ پانی پینے کے باعث چھ ہزار سے زائد شہریوں کو بیماری کے باعث اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے، جن میں سے بیشتر ہیضے میں مبتلا ہو چکے ہیں،

مزیدخبریں