بھارت میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کے بعد حزب اختلاف نے10 ستمبر سے ملک بھر احتجاج کا اعلان کر دیا

Sep 07, 2018 | 07:50

نریندر مودی کے اقتدار میں آنے کے بعد مئی دوہزار چودہ سے پیٹرولیم مصنوعات کے نرخ میں بتدریج اضافہ کیا گیا، بھارت پیٹرولیم مصنوعات استعمال کرنے والا دنیا کا تیسرا بڑا ملک ہے، کانگریس نے نریندرمودی حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے اسے لوٹ مار قرار دیا ہے، کانگریس رہنمائوں کا کہنا ہے کہ مودی کے اقتدار میں آنے سے لے کر اب تک ایک سو باون ارب ڈالر پیٹرولیم مصنوعات کی مد میں قیمتوں کے اضافے سے حاصل کئے گئے، جبکہ قیمتیں بڑھانے سے عوام پر اضافی بوجھ ڈالا گیا، سینئر کانگریس لیڈر اشوک گیہلوٹ کا کہنا ہے کہ حکومت کی ناکام منصوبہ بندی کے باعث پیٹرولیم مصنوعات میں اضافہ ہوا، جبکہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قمیت میں کمی کے باوجودعوام پربے جا بوجھ ڈالا گیا،

مزیدخبریں