الیکشن کمیشن کا منتخب ارکان کے انتخابی اخراجات کی چھان بین کا فیصلہ

Aug 08, 2018 | 12:49

الیکشن کمیشن نے کامیاب ارکان کے انتخابی اخراجات کی چھان بین کا فیصلہ کر لیا۔ پولیٹیکل ونگ 90 روز میں انتخابی اخراجات کی چھان بین کرے گا۔ نجی ٹی وی کے مطابق، مقررہ مدت میں تحقیقات مکمل نہ ہوئی تو تفصیلات درست سمجھی جائیں گی، قومی اسمبلی کے اخراجات کی حد 40، صوبائی اسمبلی کی نشست کے لیے حد 20 لاکھ مقرر کی گئی تھی۔خیال رہے گزشتہ روز الیکشن کمیشن نے عام انتخابات میں جیتنے والے قومی وصوبائی اسمبلیوں کے 815 امیدواروں کے نوٹیفکیشن جاری کئے تھے جبکہ تحریک انصاف کے نامزد وزیر اعظم عمران خان کے دو حلقوں سمیت قومی و صوبائی اسمبلیوں کے 26 نتائج روک لیے گئے۔تحریک انصا ف نے نتائج روکنے پر چیف جسٹس سے نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ انتقال اقتدار کے حوالے سے غیر یقینی صورتحال پیداکی جارہی ہے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق ملک بھر میں قومی و صوبائی اسمبلیوں کے مجموعی طور پر 841 حلقوں پر انتخابات ہوئے جن میں سے 815 کا نوٹیفکیشن جاری کیا جا چکا ہے۔ عدالتوں اور الیکشن کمیشن میں زیر سماعت مقدمات کے باعث کچھ حلقوں میں نوٹی فکیشن روکے گئے ہیں جبکہ کچھ فیصلے سے مشروط کر دیئے گئے۔

مزیدخبریں