پاکستانی پانیوں کی محافظ فوج کےکارناموں کے اعتراف میں 8 ستمبرکویوم بحریہ کےطورپرمنایا جاتا ہے۔

Sep 08, 2018 | 08:37

جنگ ستمبر پاکستان اور بھارت کے مابین ایسا معرکا تھا جس میں بری، بحری اور فضائی فوج نے دفاع وطن کا فریضہ بھرپور طریقے سے سرانجام دیا۔ پاک بحریہ نے سات ستمبر کی شب"آپریشن دوارکا"جیسا لازوال کارنامہ انجام دیا۔ سوناٹیکل میل دور کامیاب آپریش میں دشمن کے جدید ترین ریڈار سسٹم کو تباہ کردیا گیا۔ ممبئی ہاربرپر بھارتی فریگیٹ کوکری کو پاکستانی آبدوز نے میزائل سے تباہ کردیااس آپریشن کو سومنات پر اٹھارواں حملہ بھی کہا جاتا ہے۔ آپریشن میں پاکستان کی جانب سے پی این ایس بابر،،خیبر، بدر،جہانگیر، شاہ جہاں، عالم گیر، ٹیپو سلطان اور غازی نے حصہ لیا ۔پاک بحریہ نے بھارتی ساحلوں پر برتری ثابت کردی۔ طیارہ بردار جہاز نہ ہونے کے باوجود پاک بحریہ نے جنگ میں بہادری اور پیشہ ورانہ مہارت کی نئی تاریخ رقم کی، پاکستان کی واحد آبدوزغازی نے اپنےنام کی لاج رکھی اورغازی رہ کر وہ کارنامہ انجام دیا کہ دنیا حیران رہ گئی۔ سات اور آٹھ ستمبر کی درمیانی شب کئے گئے حملوں سےدشمن کے اوسان خطا ہوگئے، یہی وجہ تھی کہ بھارت بحری محاذ پر کسی کارروائی کی جرأت نہ کرسکا۔

مزیدخبریں