بابائے قوم قائداعظم کی برسی: گورنرسندھ اور وزیراعلیٰ سندھ کی مزار قائد پر حاضری

Sep 11, 2018 | 15:44

بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کی برسی کے موقع پر پر گورنرسندھ عمران اسماعیل اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سندھ کابینہ کے اراکین کے ہمراہ مزارقائد پر حاضری دی، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ

بلدیہ ٹاؤن کی فیکٹری میں انسانیت کیساتھ بڑا ظلم ہوا، اس سانحے پر جے آئی ٹیز بنیں، مصلحت سے ہٹ کر ملزمان کو سزا دی جائے،حکومت نے متاثرہ خاندانوں کی مدد کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ الیکشن میں بے ضابطگیوں کے بڑے شواہد موجود ہیں، اٹھارہویں ترمیم کو رول بیک نہیں ہونے دیں گے، اگر صوبائی خودمختاری اور آئین کے برخلاف کوئی بات آئی تو مزاحمت کریں گے،ہم صوبائی خودمختاری پر کبھی سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ پانی ہے ہی نہیں، ہم کہاں سے ڈیم کو بنائیں گے، دیا مر بھاشا ڈیم پیپلز پارٹی نے دیا تھا، متنازع منصوبے پر صوبوں کو اعتماد میں لیا جائے۔ بھاشا ڈیم کے لوکیشن کا معاملہ ہے، ڈاؤن اسٹریم کوٹری پانی روک کر ڈیم بنانا سندھ میں ڈیلٹا کو تباہ کرنے کے مترادف ہے۔

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ انتخابات کروانے کا جو ٹاسک نگران حکومت کو دیا گیا تھا، اس وجہ سے اسٹریٹ کرائم بڑھا، ایسے افسران کو ایسی جگہ تعینات کیا گیا جہاں پر وہ کبھی گئے ہی نہیں تھے۔ ہم سیف سٹی پروجیکٹ شروع کررہے ہیں، اسٹریٹ کرائم کو کنٹرول کرنے کے لیے پولیس کام کررہی ہے، دہشت گردی کی طرح اسٹریٹ کرائمز پر بھی قابو پا لیں گے۔

مزیدخبریں