لیگی رہنماؤں نے نواز شریف اور مریم نواز کا نام ای سی ایل میں ڈالنے پر سخت ردعمل دیتے ہوئے اسے انتقامی کارروائی قرار دے دیا

Aug 21, 2018 | 10:11

خواجہ سعد رفیق اور خواجہ آصف کی توپوں کا رخ تحریک انصاف کی جانب، ٹوئٹر پر بیان دیتے ہوئے سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ عمران کے مشرفی مشیر انھیں کہیں کا نہیں چھوڑیں گے، اُنھیں احتساب کے نام پر مخالفین سے بِھڑ کر ہیرو بن جانے کےمشورے دیے جا رہے ہیں، یاد رکھا جائے یہاں وزرأ اعظم کا آنا مشکل اور جانا بہت آسان ہے، وفاقی کابینہ کے پہلے اجلاس ہی میں نواز شریف خاندان کا نام ای سی ایل میں ڈالنا سیاسی انتقام ہے میاں نواز شریف کو ای سی ایل پر رکھنا عمران حکومت کے لئے درد سربن جائے گا۔ دوسری جانب ٹوئٹر پر ہی سابق وزیر خارجہ خواجہ آصف نے لکھا کہ کابینہ کی پہلی میٹنگ میں اڈیالہ جیل کے تین قیدیوں کو ای سی ایل پر ڈالنے کا فیصلہ کیا گیا، حکمران کتنے کمزور اور عدم تحفظ کاشکار ہیں جو جیل کی اونچی دیواروں کے پیچھے کو ٹھر یوں میں بند قیدیوں سے خوف کھا رہے ہیں۔ ظر ف، سیاسی اور انسانی اقدار سے دیوالیہ پن کے مظاھرہ کے علاوہ کچھ نہیں، افسوس صد افسوس شیخ رشید کو چپڑاسی بنانے کو تیار نھیں تھے لیکن آج وزیر بنا دیا۔ پستی سے بلند ی کا سفر کب طے ھوا؟ خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ امیر المو منین حضرت علی کا قول ھے کے ا قتدار سےلوگ بدلتےنھیں صرف بے نقاب ھوتے ھیں۔اصلیت عیاں ھو تی ھے

مزیدخبریں